Thursday , October 19 2017
Home / Top Stories / تلنگانہ کا نیا سکریٹریٹ ،10 منزلہ عالیشان خصوصی ڈیزائن

تلنگانہ کا نیا سکریٹریٹ ،10 منزلہ عالیشان خصوصی ڈیزائن

ممبئی کے آرکیٹکٹ حفیظ سے خدمات کا حصول، پرکشش ڈیزائن سے آراستہ، چیف منسٹر کا آج کابینہ میں فیصلہ متوقع
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ حکومت نے کاکتیہ تہذیب و تمدن کی عکاسی اور کرناٹک اسمبلی کی طرز پر سارے ملک کے لیے رول ماڈل ثابت ہونے والی عالیشان 10 منزلہ سکریٹریٹ تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ہے تعمیراتی کام  کیلئے ممبئی کے ماہر آرکیٹکٹ حفیظ کنٹراکٹر ڈیزائن کے ذریعہ انجام دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ ڈیزائن ختم نومبر تک تیار ہوجائے گا۔ واستو کے مطابق کامپلکس کا رخ مشرق کی جانب ہوگا۔ جس پر 150 کروڑ روپئے خرچ کیے جائیں گے ۔ 6 ایکڑ اراضی پر خوبصورت گارڈن تعمیر کیا جائے گا ۔ ہیلی پیاڈ ، پارکنگ کے علاوہ تمام عصری سہولتیں ایک ہی چھت کے نیچے فراہم کی جائیں گی ۔ علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد چیف منسٹر نئی ریاست میں ہر کام اس طرح انجام دے رہے ہیں تاکہ وہ مستقبل میں یادگار ثابت ہونے کے ساتھ ساتھ تاریخ میں اپنی شناخت چھوڑ سکے ۔ شہر حیدرآباد و تلنگانہ پر موجود آندھرائی چھاپ کو مٹانے تلنگانہ کی تہذیب و تمدن کو فروغ دینے کے لیے اقدامات کیے جارہے ہیں ۔ موجودہ سکریٹریٹ کی تمام عمارتوں کی جگہ نئی عمارت تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس کا ڈیزائن بھی تیار ہوگیا ہے ۔ جمعہ کو منعقد ہونے والے کابینہ اجلاس میں اس کو منظوری دینے کا بھی قوی امکان ہے ۔ چند دن قبل چیف منسٹر کے سی آر نے راج بھون پہونچکر گورنر سے ملاقات کی انہیں عصری تقاضوں کے ساتھ تعمیر کیے جانے والے سکریٹریٹ کے پلان سے واقف کراتے ہوئے آندھرا پردیش کی تحویل میں موجود سکریٹریٹ کے 4 بلاکس کو تلنگانہ حکومت کے حوالے کرانے کی خواہش کا اظہار کیا ہے ۔ اگر آندھرا حکومت کو ضرورت ہے تو شہر میں ایک بڑی عمارت حوالے کرنے کا بھی تیقن دیا ہے ۔ تلنگانہ حکومت نے 24 ایکڑ اراضی پر مشتمل احاطہ سکریٹریٹ میں 2 تا ڈھائی ایکڑ اراضی کے 5 لاکھ مربع گز اراضی پر سکریٹریٹ کے لیے صرف 10 منزلہ ایک ہی عمارت تعمیر کرنے ، 6 ایکڑ اراضی پر خوبصورت وسیع گارڈن اور پانی کا فوارہ لگانے 2 ایکڑ اراضی پر پارکنگ کامپلکس ، ہیلی کاپٹر سے سفر کرنے کے لیے ہیلی پیاڈ وغیرہ تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ کاموں کے آغاز کے ساتھ ہی اندرون ایک سال تمام تعمیری کاموں کو جنگی خطوط پر پورا کرنے کی حکمت عملی تیار کی ہے ۔ ایک ہی عمارت میں تمام آفسیس کے قیام کو یقینی بنایا جارہا ہے ۔ 10 منزلہ عمارت پر مشتمل ایک منزل 80 ہزار مربع گز پر محیط رہے گا ہر منزل کا وسیع کاریڈار تعمیر کیا جائے گا تاکہ ہوا اور روشنی کا معقول انتظام ہوسکے ۔ نئے تعمیر ہونے والے سکریٹریٹ میں بہت بڑا کانفرنس ہال اور ہر وزیر کے چیمبر سے متصل اس کا محکمہ ، اعلیٰ عہدیداروں کے چیمبرس اس کے قریب متعلقہ محکمہ کے سیکشن آفس ، منی کانفرنس ہال تعمیر کیے جائیں گے ۔ وزراء کو ضرورت کے مطابق اپنے محکمہ جات کے عہدیداروں کے ساتھ اجلاس طلب کرنے کے تمام انتظامات کیے جارہے ہیں ۔ نئے سکریٹریٹ میں چیف منسٹر کا خوبصورت چیمبر اور اس سے متصل عالیشان کانفرنس ہال ، چیف منسٹر سے ملاقات کرنے کے لیے پہونچنے والے ملاقاتیوں کے لیے بھی زبردست ویٹنگ ہال ، عہدیداروں سے روبرو ہونے کے لیے عصری ٹکنالوجی سے لیس ویڈیو کانفرنس ہال ، ریاست کے تمام اعلی عہدیداروں کے ساتھ ایک ہی ملاقات میں اجلاس طلب کرنے کے لیے بھی بڑا کانفرنس ہال اپنے کاموں کے لیے ریاست کے تمام اضلاع سے سکریٹریٹ پہونچنے والے عوام کے لیے فور و ٹو وہیلر کی 4 ہزار گاڑیوں کی پارکنگ کے لیے پارکنگ کامپلکس تعمیر کرنے ، سکریٹریٹ کے احاطہ میں بہت بڑی کینٹین ، ایمپلائز کو بھی طبی سہولت فراہم کرنے کے لیے گورنمنٹ ڈسپنسری ، اشیائے ضروریہ حاصل کرنے کے لیے راشن کا کاونٹر ، ایمپلائز کے فیٹنس کے لیے جم وغیرہ کا بھی انتظام کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ حکومت کے اس باوقار پراجکٹ کی تکمیل کے لیے شہر کے دیگر مقامات پر عمارتیں دستیاب ہوتے ہی سکریٹریٹ میں خدمات انجام دینے والے عملے کو مرحلہ واری اساس پر ان عمارتوں میں منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ جے اے ڈی کو شہر کے دوسری عمارتوں میں منتقل کرنے کا جائزہ لیا جارہا ہے ۔ ایک ایک کر کے تمام محکمہ جات کو شہر کی دوسری عمارتوں میں منتقل کرتے ہوئے سکریٹریٹ میں نئی عمارت کی تعمیری کاموں کا آغاز کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT