Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کو ویلفیر اسٹیٹ بنانا ہمارا اصل مقصد : ایٹالہ راجندر

تلنگانہ کو ویلفیر اسٹیٹ بنانا ہمارا اصل مقصد : ایٹالہ راجندر

آندھرائی قائدین کی رکاوٹوں کے باوجود علیحدہ ریاست کے حصول میں کامیابی : وزیر فینانس کا کانفرنس سے خطاب
حیدرآباد 5 مئی ( این ایس ایس ) ریاستی وزیر فینانس ایٹالہ راجندر نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت کا قطعی مقصد یہی ہے کہ تلنگانہ کو ایک ویلفیر ریاست میں تبدیل کیا جائے ۔ کنفیڈریشن آف انڈین انڈسٹریز اور این ٹی پی سی کی جانب سے منعقدہ ایک سی ایس آر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایٹالہ راجندر نے اس خیال کا اظہار کیا ۔ انہوںنے واضح کیا کہ ٹی آر ایس نے کس طرح سے تلنگانہ کیلئے علیحدہ ریاست حاصل کرنے 14 سال طویل جدوجہد کی تھی ۔ اس جدوجہد میں ریاست کے عوام نے بھی حصہ لیا ۔ انہوں نے کہا کہ کئی طاقتیں تلنگانہ کے خلاف ہوگئی تھیں۔ اس طرح کی رکاوٹوں اور رخنہ اندازی کے باوجود جو آندھرا کے حکمرانوں اور سیاستدانوںن ے پیدا کی تھیں تلنگانہ احتجاجیوں نے کے چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں مسلسل جدوجہد کی اور علیحدہ ریاست حاصل کرلی ۔ انہوں نے صنعتوں اور تاجر برادری پر زور دیا کہ وہ کارپوریٹ اور سماجی ذمہ داری میں بھی حصہ داری نبھائیں اور تیز رفتار ترقی کے مقصد میں حکومت کے ہاتھ مضبوط کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ چونکہ ریاست میں ٹی آر ایس کو اقتدار حاصل ہوچکا ہے اس لئے اب یہ ریاست ایک ایسی ریاست میں تبدیل کی جائیگی جو ویلفیر پر مبنی ہوگی اور یہاں ہر شعبہ کی تیز رفتار ترقی ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ کئی قائدین نے عوام کو تلنگانہ ریاست کے تعلق سے گمراہ کرنے کی کوشش کی تھی لیکن یہ سب رکاوٹیں ناکام ثابت ہوگئیں۔ انہوں نے ادعا کیا کہ تلنگانہ حکومت حالیہ عرصہ میں برقی کے بحران کو حل کرلینے میں کامیاب ہوگئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے 36,000 کروڑ روپئے کی خطیر رقومات ویلفیر پر خرچ کی جا رہی ہیں اور جھیلوں کے احیاء کیلئے بھی بھاری رقم مختص کی گئی ہے جو کسانوں کیلئے کار آمد ثابت ہوگی ۔ اس کے علاوہ زیر زمین سطح آب میں اضافہ ہوگا اور ریاست میں ہرطرف سرسبز و شاداب ماحول ہوگا اور بہتر پیداوار کو یقینی بنایا جائیگا ۔ انہوں نے کہا کہ یہی ہمارے چیف منسٹر کا عزم ہے جو دن رات عوام کو شامل کرتے ہوئے اہم ترین پروگراموں کو مکمل کرنے کیلئے جدوجہد کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کے جی تا پی جی مفت تعلیم کی اسکیم پر جاریہ سال سے عمل آوری کا آغاز ہوگا ۔ وزیر فینانس نے دعوی کیا کہ ریاستی حکومت نے اپنی نوعیت کی منفرد صنعتی پالیسی پیش کی ہے اور صنعتوں و کمپنیوںکو سرمایہ کاری کیلئے راغب کرنے ہر طرح کے اجازت نامے صرف دو ہفتوں میں منظور کئے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹی ایس آئی پاس ریاستی حکومت کا ایک اور طرہ امتیاز ہے اور اس کے مثبت نتائج برآمد ہو رہے ہیں۔ کئی عالمی کمپنیوں نے تلنگانہ میں سرمایہ کاری کرنے میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے اور حیدرآباد کو عالمی اہمیت حاصل ہوجائیگی ۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت نے مکمل سکیوریٹی اور تحفظ کو بھی اولین ترجے دی ہوئی ہے اور تقریبا ایک لاکھ سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جا رہے ہیں جن کا ایک نگران کار اور کمان کنٹرول سنٹر بھی قائم ہو رہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT