Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کیلئے خصوصی پیاکیج کا مطالبہ، مودی کا معاندانہ رویہ

تلنگانہ کیلئے خصوصی پیاکیج کا مطالبہ، مودی کا معاندانہ رویہ

مختلف شعبوں میں ناانصافی کی شکایت، بلدی انتخابات میں ٹی آر ایس شاندار مظاہرہ کرے گی: کے ٹی آر

حیدرآباد۔/26ڈسمبر، ( سیاست نیوز) وزیر پنچایت راج و انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے وزیر اعظم نریندر مودی سے مطالبہ کیا کہ اگر انہیں تلنگانہ عوام سے ذرا بھی ہمدردی ہو تو گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے مجوزہ انتخابات سے قبل تلنگانہ کیلئے ایک لاکھ کروڑ روپئے کے خصوصی پیاکیج کا اعلان کریں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے ریاستی صدر کشن ریڈی کو چاہیئے کہ وہ اس سلسلہ میں وزیر اعظم نریندر مودی پر دباؤ بنائیں تاکہ تلنگانہ ریاست کی ترقی کیلئے مرکز سے خصوصی پیاکیج حاصل کیا جاسکے۔ کے ٹی آر گوشہ محل اسمبلی حلقہ میں مختلف جماعتوں سے تعلق رکھنے والے قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت اور مہیلا گرجنا سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ بہار کے انتخابات سے قبل وزیر اعظم نے ایک لاکھ کروڑ سے زائد کے پیاکیج کا اعلان کیا تھا اسی طرح جموں و کشمیر کیلئے بھی بڑے پیاکیج کا اعلان کیا گیا لیکن افسوس کہ نئی ریاست تلنگانہ کو نظرانداز کردیا گیا ہے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ وزیر اعظم کا رویہ تلنگانہ ریاست کے ساتھ معاندانہ ہے اور مختلف شعبوں میں تلنگانہ کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تنظیم جدید قانون میں تلنگانہ کیلئے جن مراعات کا اعلان کیا گیا تھا ان پر عمل آوری کی جانی چاہیئے۔ راما راؤ نے کہا کہ تلنگانہ جدوجہد کے دوران مخالفین کی جانب سے ریاست کی تقسیم کی صورت میں برقی اور امن وضبط کی ابتر صورتحال کے اندیشہ ظاہر کئے گئے لیکن ٹی آر ایس حکومت نے ان تمام اندیشوں کو غلط ثابت کردیا اور ریاست کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ ریاست میں دیگر ریاستوں سے تعلق رکھنے والوں کے ساتھ ناانصافی کا پروپگنڈہ کیا گیا لیکن آج تلنگانہ میں راجستھان، مدھیہ پردیش اور دیگر ریاستوں سے تعلق رکھنے والے افراد اطمینان کے ساتھ زندگی بسر کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تجارت اور دیگر شعبوں میں دیگر ریاستوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی اہم حصہ داری ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ 30برسوں میں برقی پیداوار پر کوئی توجہ نہیں دی گئی تھی لیکن ٹی آر ایس حکومت نے صرف  18ماہ میں برقی بحران پر قابو پالیا ہے۔ شدید گرمی کے دوران بھی برقی کی سربراہی میں کٹوتی نہیں کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کے تحفظ کیلئے پولیس میں ’ شی ٹیمیں ‘ تشکیل دی گئی ہیں جو ہراسانی اور مظالم کے واقعات روکنے میں اہم رول ادا کررہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں 38لاکھ افراد کو وظیفہ کی منظوری حکومت کا کارنامہ ہے اور فلاحی اسکیمات میں تلنگانہ دیگر ریاستوں سے آگے ہے۔ انہوں نے کہا کہ دسہرہ، رمضان، کرسمس اور دیگر مذہبی تہواروں کے موقع پر حکومت نے خصوصی بجٹ منظور کیا اور ان تہواروں کو سرکاری طور پر منایا۔ انہوں نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں ٹی آر ایس شاندار کامیابی حاصل کرے گی اور عوام کے تمام طبقات کی اسے تائید حاصل ہوگی۔ اس موقع پر وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی کے علاوہ گریٹر حیدرآباد ٹی آر ایس کے صدر ایم ہنمنت راؤ اور دیگر قائدین موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT