Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کی ڈبل بیڈ روم اسکیم کو مرکز کی اسکیم ہاؤزنگ فار آل میں شمولیت کی مساعی

تلنگانہ کی ڈبل بیڈ روم اسکیم کو مرکز کی اسکیم ہاؤزنگ فار آل میں شمولیت کی مساعی

چیف منسٹر کے سی آر کا مرکزی حکومت کو مکتوب، شہر کو سلم سے پاک بنانے کا عزم
حیدرآباد 18 ڈسمبر (سیاست نیوز) ریاستی حکومت کی جانب سے شروع کردہ دو بیڈ روم فلیٹ امکنہ اسکیم کو حاصل ہورہی زبردست مقبولیت کو دیکھتے ہوئے حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ اس منصوبہ کو مرکزی حکومت کی جانب سے چلائی جانے والی اسکیم ’’ہاؤزنگ فار آل‘‘ میں شامل کروایا جائے تاکہ ریاست میں 62 ہزار فلیٹس کی تعمیر کو یقینی بنایا جاسکے۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاع کے بموجب چیف منسٹر مسٹر کے چندرشیکھر راؤ اس سلسلہ میں مرکز کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے سی ایل ایس ایس اسکیم کے تحت شہری متوسط طبقہ کو بذریعہ قرض فراہم کی جانے والی اسکیم میں شامل کرنے کی خواہش کریں گے۔ مرکزی حکومت کی جانب سے چلائی جانے والی اسکیم کے متعلق سالانہ 3 تا 6 لاکھ روپئے آمدنی والے افراد اس اسکیم سے استفادہ کے اہل ہوں گے جنھیں حکومت کی جانب سے 6 لاکھ روپئے قرض 15 سال کی مدت کے لئے فراہم کیا جائے گا اور اس قرض پر 2.5 فیصد سود 15 سال کے دوران ادا کرنا ہوگا جوکہ متعلقہ بینک کو ادا کیا جائے گا۔ ریاستی حکومت کی جانب سے اس اسکیم کے حصول میں کامیابی حاصل ہوتی ہے تو ایسی صورت میں ریاست کے غریب عوام بالخصوص مسلمانوں کو زبردست فائدہ حاصل ہونے کا امکان ہے کیونکہ اس اسکیم کے تحت شہری علاقوں میں رہنے والے غریب طبقات کو ترجیحی بنیادوں پر امکنہ کی فراہمی یقینی بنائی جانی ہے۔ 3 تا 6 لاکھ روپئے سالانہ آمدنی رکھنے والے غریب خاندان اس اسکیم سے مستفید ہوسکتے ہیں۔ ریاستی حکومت تلنگانہ کی جانب سے ریاست کے مختلف شہروں میں جملہ 62 ہزار امکنہ کی فراہمی کا منصوبہ ہے۔ جبکہ مرکز میں 10,190 امکنہ کی فراہمی کے لئے منظوری فراہم کردی ہے۔ مرکزی حکومت کی جانب سے اس اسکیم کے تحت ریاست کو دیڑھ لاکھ روپئے ادا کئے جارہے ہیں جبکہ مابقی رقم ریاستی حکومت کو فراہم کرنی پڑتی ہے۔ شہری علاقوں میں رہنے والے متوسط طبقہ کے عوام کے معیار زندگی کو بہتر بنانے اور اُنھیں فلیٹس کی فراہمی کے ذریعہ شہر کو سلم سے پاک بنانے کے منصوبہ کے تحت چلائی جارہی اس اسکیم میں ریاستی حکومت نے مفت فلیٹس فراہم کرنے کا منصوبہ تیار کیا ہے اور اس سلسلہ میں آئی ڈی ایچ کالونی میں فلیٹس کی حوالگی کے بعد اس منصوبہ کو زبردست پذیرائی حاصل ہورہی ہے۔ امکنہ اسکیم کو حاصل ہونے والی پذیرائی کو دیکھتے ہوئے حکومت نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ مرکز کی جانب سے چلائی جانے والی امکنہ اسکیمات کو بھی ریاست میں روشناس کرواتے ہوئے عوام کو فائدہ پہونچانے کے اقدامات کئے جائیں۔ مسلم طبقات اگر ان اسکیمات سے استفادہ کرتے ہیں تو انھیں بھی زبردست حصہ سرکاری طور پر فراہم کی جانے والی امکنہ اسکیم میں زبردست فائدہ حاصل ہوسکتا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT