Tuesday , May 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے اقلیتی بجٹ میں اضافہ کا خیر مقدم : محمد فاروق حسین

تلنگانہ کے اقلیتی بجٹ میں اضافہ کا خیر مقدم : محمد فاروق حسین

شادی مبارک اور ائمہ موذنین کے اعزازیہ میں اضافہ پر چیف منسٹر سے اظہار تشکر ، ارکان اسمبلی و کونسل کے بیانات
حیدرآباد۔13مارچ (سیاست نیوز) حکومت نے اقلیتوں کے بجٹ میں 45کروڑ کا اضافہ کیا ہے اور مستقبل میں یہ بجٹ مکمل خرچ کرتے ہوئے حکومت کی جانب سے ریاست کے اقلیتوں کی ترقی کے ممکنہ اقدامات کئے جائیں گے۔ جناب محمد فاروق حسین رکن قانون ساز کونسل نے بجٹ 2017-18پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت نے تمام طبقات سے انصاف کرتے ہوئے یہ ثابت کردیا ہے کہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی حکومت ریاست میں تمام طبقات کی مساوی ترقی کے عہد کی پابند ہے۔ جناب فاروق حسین نے بتایا کہ ریاست تلنگانہ میں حکومت نے تیسرا بجٹ پیش کیا ہے اور اس بجٹ میں جو محروم طبقات کو حصہ دیا گیا ہے اس سے ریاست بھر کے عوام میں خوشی کی لہرپائی جاتی ہے۔ تلنگانہ ارکان قانون ساز کونسل مسٹر سدھاکر ریڈی ‘ مسٹر ایم ایس پربھاکر‘ مسٹر وینکٹیشورلو‘ مسٹر پی راجیشور ریڈی اور مسٹر وی گنگا دھر کے علاوہ دیگر نے بھی بجٹ کا خیر مقدم کیا اور اسے موافق عوام قرار دیا۔ جناب فاروق حسین نے شادی مبارک اسکیم میں دی جانے والی رقم 51ہزار کو بڑھاتے ہوئے 75ہزار 116روپئے کئے جانے اور ائمہ و موذنین کو دیئے جانے والے اعزازیہ کو 1000سے بڑھا کر 1500کئے جانے پر چیف منسٹر سے اظہار تشکر کیا ۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت تلنگانہ بہت جلد تعلیمی وظائف اور فیس بازادائیگی کے بقایاجات ادا کرے گی اور عوام کے اعتماد کا جائزہ لینے کے لئے شہر میں رہتے ہوئے حکومت پر تنقید کرنے کے بجائے قائدین کو دیہی علاقوں کا دورہ کرنا چاہئے۔ مسٹر پی راجیشور ریڈی نے کہا کہ ریاست میں تاریخ ساز بجٹ پیش کیا گیا ہے اور اس بجٹ میں تعلیم کے شعبہ کے ساتھ ساتھ تمام ان شعبہ جات کا احاطہ کیا گیا جس میں اضافی رقومات کی تخصیص درکار ہے۔ مسٹر ایم ایس پربھاکر نے بتایا کہ ریاستی حکومت نے نہ صرف اقلیتوں بلکہ تمام محروم طبقات ایس سی ‘ ایس ٹی ‘ بی سی اور انتہائی پسماندہ طبقات کیلئے بھی قابل لحاظ بجٹ مختص کیا ہے جس کے ذریعہ تمام طبقات کی ترقی ممکن ہو پائے گی۔ مسٹر ایم ایس پربھاکر نے کہا کہ ریاست میں طبی سہولتوں کو بہتر بنانے کے علاوہ سرکاری دواخانوں کی حالت کو سدھارنے کے لئے بھی بجٹ میں خصوصی رقم کی تخصیص حکومت کی وسیع النظری کی مثال ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT