Tuesday , October 17 2017
Home / Top Stories / تلنگانہ کے اہم شعبوں میں سرمایہ کاری کے بہترین مواقع

تلنگانہ کے اہم شعبوں میں سرمایہ کاری کے بہترین مواقع

چینائی کے صنعتکاروں سے سرمایہ کاری کی خواہش، کے ٹی راما راؤ کا دورہ
حیدرآباد 10 جنوری (سیاست نیوز) ریاستی وزیر آئی ٹی کے ٹی آر نے چینائی میں صنعتکاروں سے ملاقات کرکے تلنگانہ میں سرمایہ کاری کی اپیل کی۔ دی ساؤتھ انڈیا کنکلویو سے خطاب بھی کیا۔ کے ٹی آر دو روزہ دورہ پر چینائی پہونچے جہاں آج انھوں نے ٹی وی ایس لاجسٹکس کے منیجنگ ڈائرکٹر دنیش اور ان کے وفد سے ملاقات کی اور انھیں بتایا کہ تلنگانہ میں لاجسٹکس شعبہ کیلئے بہتر مواقع ہیں۔ امیزان فلپ کارٹ جیسے اداروں نے اپنے ویر ہاؤز قائم کئے ہیں۔ اس شعبہ میں ٹی وی ایس کو بھی تلنگانہ کا رُخ کرنے کی اپیل کی اور کہاکہ حیدرآباد میں پرامن ماحول ہے اور تلنگانہ قدرتی و انسانی وسائل سے مالا مال ہے۔ حکومت ٹی وی ایس گروپ سے ہرممکن تعاون کرنے تیار ہے۔ ٹی وی ایس ادارہ کے ایم ڈی نے کے ٹی آر کو تیقن دیا کہ جی ایس ٹی پر عمل آوری کے بعد ان کا ادارہ اس کی توسیع کے لئے خصوصی منصوبہ بندی تیار کرے گا اور مذاکرات کے لئے تلنگانہ کو بھی پہونچے گا۔ سن مار گروپ کے نمائندوں سے بھی کے ٹی آر نے ملاقات کی۔ حیدرآباد کے قریب میں تعمیر کئے جانے والے پلاسٹک پارک میں سرمایہ کاری کی اپیل کی۔ سندرم پاسٹنرس، رانے انجینئرنگ کمپنی کے نمائندوں سے بھی وزیر موصوف نے ملاقات کی۔ سوروگپا گروپ کے کارگذار صدرنشین ولائن سے بھی کے ٹی آر نے ملاقات کی۔ زرعی پیداوار میں اضافہ کے لئے گروپ کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ ریاستی وزیر آئی ٹی نے دی ساؤتھ انڈیا کانکلویو سے خطاب کرتے ہوئے آئی ٹی شعبہ میں جنوبی ہند کے شہروں حیدرآباد، بنگلور اور چینائی کا اہم رول ہے۔ کے ٹی آر نے کہاکہ آئی ٹی کے بشمول صنعتی شعبہ میں سرمایہ کاری کرنے کے لئے حیدرآباد میں بہتر مواقع دستیاب ہیں۔ نئی تشکیل پانے والی تلنگانہ ریاست کو اسٹارٹ اپ اسٹیٹ کے بھی نام سے پکارا جارہا ہے۔ حکومت تلنگانہ نے زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کے لئے نئی صنعتی پالیسی کا اعلان کیا ہے۔ ہماری جانب سے تیار کردہ پالیسی پر ملک کی دوسری ریاستیں تقلید کررہی ہیں۔ ٹی ایس آئی پاس پالیسی کے تحت کمپنیوں کے قیام کے لئے درکار تمام منظوریاں صرف 15 دن میں دی جارہی ہیں۔ تاخیر کرنے والے عہدیداروں کے خلاف جرمانے عائد کئے جارہے ہیں۔ حکومت تلنگانہ کی اس پالیسی کی ملک اور بیرون ممالک کے بڑے کارپوریٹ اداروں نے کافی ستائش کی ہے۔ شفافیت کو فروغ دینے کے لئے سنگاپور طرز کی پالیسی تیار کی گئی ہے۔ حکومت کی بے مثال کارکردگی پر بزنس کے معاملے میں تلنگانہ کو سارے ملک میں نمبر ون مقام حاصل ہوا ہے۔ کے ٹی آر نے کہاکہ ترقی کے لئے ریاستوں کے درمیان مسابقت کے ساتھ تال میل بھی لازمی ہے۔ سرمایہ کاری کے لئے ملک کی ریاستوں میں ہی بیرونی ممالک میں بھی مسابقت جاری ہے۔

TOPPOPULARRECENT