Monday , October 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے ماضی ، حال اور مستقبل پر کتاب کا رسم اجراء

تلنگانہ کے ماضی ، حال اور مستقبل پر کتاب کا رسم اجراء

مرکزی حکمرانوں کو واقف کروانے کا زرین موقع ، پروفیسر کودنڈا رام اور دیگر کا خطاب
حیدرآباد۔8جنوری(سیاست نیوز) تلنگانہ کے ماضی حال اور مستقبل پر لکھی جانے والی کتابیں علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے خلاف جاری سازشوں کے متعلق مرکزی حکمرانو ںکو آگاہ کرنے کا بہترین ذریعہ ثابت ہونگی ۔ رویندرا بھارتی میں ڈاکٹر سندھیا ویپلاوا کی انگریزی کتاب ’’دی ایپک سیگا آف سائیل اینڈ سالویشن‘‘ کی رسم اجراء تقریب سے مہمانِ خصوصی کی حیثیت سے خطاب کے دوران  چیرمن تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی پروفیسر کودنڈارام نے یہ بات کہی۔ امنکا وینوگوپال ساہتیہ اکیڈیمی ایوارڈ یافتہ‘رکن پارلیمنٹ بھونگیر بھورا نرسیا گوڑ‘ رکن پارلیمنٹ چیوڑلہ کونڈ ا ویشویشو رریڈی‘پریس اکیڈیمی چیرمن الم نارائنا ‘شریمتی اولگا‘ شریمتی دیویکی دیوی‘راما روالپاداسو‘اور مسٹر ستیش چندرا بھی اس موقع پر موجود تھے۔ پروفیسر کودنڈارام نے اپنے سلسلے میں کہا کہ علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل کو آندھرا کی ترقی میں رکاوٹ قراردیا جانے کی کوششیں کی جارہی ہیں جبکہ تلنگانہ کے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں اور تلنگانہ کو تباہی کے دہانے پر پہنچانے کی کوششوں کے خلاف تحریک چلاتے ہوئے علیحدہ ریاست کا قیام عمل میں لایا گیا مگر تلنگانہ ریاست کے مخالفین تلنگانہ کی چار کروڑ عوام کے اس جذبے کو نظر انداز کرتے ہوئے تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے عین مقصد کو فرامو ش کرنے کررہے ہیں  ۔کودنڈارام نے کہاکہ علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل ساٹھ سالہ جدوجہد کا نتیجہ ہے نہ کہ آندھرا کی تباہی کے لئے ۔ انہوں نے مزیدکہاکہ آندھرا کی تباہی کی دہائی دینے کے بجائے ریاست تلنگانہ کی ترقی کے لئے بات کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ غیرعلاقائی حکمرانوں نے تلنگانہ او رتلنگانہ کی عوام کے ساتھ ناانصافیوں کی تمام حدیں پار کردی تھیں ۔ کودنڈارام نے کہاکہ انگریزی کے ساتھ ہندی زبان میںاس قسم کی کتابوں کی اشاعت مرکزی حکمرانوں کا مرکز توجہہ بن سکتی ہے ۔چیرمین تلنگانہ پریس اکیڈیمی الم نارائنا نے نیل کمل پبلیکشن اور ڈاکٹر سندھیا کو مبارکباد پیش کی ۔ انہوں نے کہاکہ تلنگانہ پر ایسی کتابیں یقینا نئی ریاست کی ترقی میںحائل رکاوٹوں کو دور کرنے میں مددگار ثابت ہوںگی۔

TOPPOPULARRECENT