Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے نئے سکریٹریٹ کی تعمیر کے لیے اپوزیشن کے اعتراضات مسترد

تلنگانہ کے نئے سکریٹریٹ کی تعمیر کے لیے اپوزیشن کے اعتراضات مسترد

عصری سکریٹریٹ تعمیر کرنے حکومت کا عزم ، ٹی آر ایس ایم ایل سی کے پربھاکر
حیدرآباد ۔ 24۔اکتوبر (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے نئے سکریٹریٹ کی تعمیر پر اپوزیشن جماعتوںکے اعتراضات کو مسترد کردیا اور کہا کہ عوامی سہولت کیلئے حکومت نے سکریٹریٹ کا نیا کامپلکس تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ٹی آر ایس رکن قانون ساز کونسل کے پربھاکر نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی مسئلہ پر اعتراض کرنا اپوزیشن کا شیوہ بن چکا ہے۔ نئے اضلاع کی تشکیل اور پھر نئے سکریٹریٹ کی تعمیر پر اعتراضات مضحکہ خیز ہے۔ بہتر حکمرانی کیلئے حکومت نے نئے اضلاع قائم کئے جس کا عوام کی جانب سے استقبال کیا جارہا ہے ۔ چھوٹے اضلاع میں عوامی اسکیمات پر بہتر انداز سے عمل آوری کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئے سکریٹریٹ کی تعمیر کا مقصد بہتر سہولتوں کے ساتھ ساتھ عوامی مسائل کے حل کیلئے تمام عہدیداروں کو ایک ہی مقام پر دفتر فراہم کرنا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کسی بھی ریاست میں نئے سکریٹریٹ کی تعمیر کوئی نئی بات نہیں۔ نئے سکریٹریٹ میں تمام محکمہ جات کے دفاتر ایک ہی مقام پر موجود ہوں گے اور عوام کو اپنے مسائل کے حل کیلئے شہر کے مختلف علاقوں میں دفاتر کی تلاش کی ضرورت نہیں پڑے گی ۔ پربھاکر نے کہا کہ موجودہ سکریٹریٹ میں سہولتوںکی کمی ہے، حتیٰ کہ پارکنگ کیلئے جگہ دستیاب نہیں۔ سکریٹریٹ کے احاطہ میں موجود بعض عمارتیں نظام کے دور میں تعمیر کی گئی جبکہ دوسری عمارتیں50  تا 60 برس پرانی ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ سکریٹریٹ کے مراکز ایرہ گڈہ اور ملک پیٹ میں قائم کرنے سے عوام کو دشواری ہوسکتی تھی، لہذا چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے موجودہ عمارتوں کو منہدم کرتے ہوئے نئے کامپلکس کی تعمیر کا فیصلہ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس قائدین کو حکومت کا ہر قدم پسند نہیں ہے۔ اگر حکومت عوامی بھلائی کیلئے کوئی اسکیم شروع کرے تو اس پر فوری اعتراض کیا جارہا ہے ۔ پربھاکر نے کہا کہ کانگریس قائدین کو جمہوریت کے بارے میں کہنے کا کوئی حق نہیں کیونکہ ملک میں ایمرجنسی کا نفاذ کانگریس کا کارنامہ ہے جس میں ایک لاکھ 80 ہزار افراد کو گرفتار کیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ کے سی آر کی قیادت میں ٹی آر ایس حکومت مکمل طور پر جمہوری اصولوں پر کارفرما ہے۔

TOPPOPULARRECENT