Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ گرمی کی شدید لپیٹ میں 10 سال میں گرم ترین ماہِ مارچ

تلنگانہ گرمی کی شدید لپیٹ میں 10 سال میں گرم ترین ماہِ مارچ

حیدرآباد۔ 24 مارچ(آئی این این، این ایس ایس) تلنگانہ کے تقریباً تمام اضلاع گرمی کی شدید ترین لپیٹ میں ہیں۔ مصروف ترین سڑکیں سنسان نظر آرہی ہیں اور درجہ حرارت میں اضافہ کے سبب لوگ گھروں میں رہنے کو ترجیح دے رہے ہیں۔ محکمہ موسمیات نے مارچ کے ختم تک درجہ حرارت 47 ڈگری سیلسیس تک پہونچ جانے کی پیش قیاسی کی ہے جسے گزشتہ 10 سال کے دوران اب تک کا گرم ترین ماہِ مارچ تصور کیا جارہا ہے۔ آج ضلع محبوب نگر میں سب سے زیادہ 42 ڈگری سیلسیس درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا۔ نلگنڈہ ، ہنمکنڈہ، کھمم، میدک،نظام آباد اور بھدراچلم میں41، حیدرآباد اور راما گنڈم میں 40 اور عادل آباد میں درجہ حرارت 39 ، حکیم پیٹ میں 38 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا۔ آندھرا پردیش و تلنگانہ میں گرمی کے سبب گزشتہ تین دن کے دوران 10 اموات ہوئی ہیں۔ آندھرا پردیش میں1996ء کے بعد پہلی مرتبہ مارچ میں اس قدر شدید ترین گرمی دیکھی گئی جبکہ تلنگانہ میں 2010ء کے بعد پہلی بار اس ماہ شدیدگرمی محسوس کی جارہی ہے۔ نائب صدر محکمہ موسمیات جی پی شرما نے کہا کہ شدید گرما دونوں ریاستوں کے عوام کیلئے کوئی نئی بات نہیں لیکن اس سال مارچ کے اوائل سے ہی گرمی میں بے انتہا اضافہ ہوگیا ہے۔ موسم کا یہ قہر جاری رہنے کا اندیشہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT