Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / تلگودیشم کو کانگریس کے مکتوب کی وضاحت کا مطالبہ

تلگودیشم کو کانگریس کے مکتوب کی وضاحت کا مطالبہ

پالیر و ضمنی چناؤ میں کانگریس کو شکست تسلیم ،تملاناگیشور راؤ
حیدرآباد۔/22اپریل ، ( سیاست نیوز) وزیر عمارات و شوارع تملا ناگیشور راؤ نے کہا کہ کانگریس پارٹی نے انتخابات سے قبل ہی کھمم کے پالیرو اسمبلی حلقہ میں اپنی شکست کو تسلیم کرلیا ہے۔ ناگیشور راؤ جو ضمنی انتخاب میں ٹی آر ایس کے امیدوار ہوں گے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے صدر پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی کی جانب سے تلگودیشم پارٹی کی مدد حاصل کرنے کی کوشش اس بات کا ثبوت ہے کہ کانگریس پالیرو میں کامیابی حاصل نہیں کرسکتی۔ انہوں نے سوال کیا کہ اتم کمار ریڈی نے ضمنی چناؤ میں تائید کیلئے تلگودیشم کو مکتوب کیوں روانہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ تلگودیشم اور کانگریس متحدہ طور پر مقابلہ کے خواہاں دکھائی دے رہے ہیں کیونکہ وہ تنہا طور پر ٹی آر ایس سے مقابلہ کی ہمت نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہا کہ 1983 سے آج تک تلگودیشم اور کانگریس نے کبھی بھی اتحاد نہیں کیا لیکن اب نئے سیاسی اتحاد منظر عام پر آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تلگودیشم کے تلنگانہ صدر ایل رمنا کو اتم کمار ریڈی کی جانب سے لکھے گئے مکتوب کے پس منظر کی وضاحت کی جانی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں کوئی بھی پارٹی ٹی آر ایس کا مقابلہ نہیں کرسکتی اور اس کی کامیابی کی راہ میں رکاوٹ پیدا نہیں کی جاسکتی۔ ناگیشور راؤ نے کہا کہ نئی ریاست کی تشکیل کے بعد سے تمام انتخابات میں ٹی آر ایس نے کامیابی حاصل کی ہے اور حال ہی میں گریٹر حیدرآباد اور ورنگل و کھمم بلدی انتخابات میں کامیابی اس بات کا ثبوت ہے کہ عوام ٹی آر ایس کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے شروع کی گئی فلاحی اور ترقیاتی اسکیمات کو اہم ایجنڈہ بناتے ہوئے انتخابی مہم چلائی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ تلگودیشم اور کانگریس امیدواروں کی ضمانتیں بچ نہیں سکتیں۔ اگر دونوں پارٹیاں متحدہ طور پر بھی مقابلہ کریں تو ٹی آر ایس کی کامیابی یقینی ہے۔

TOPPOPULARRECENT