Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / تلگو دیشم قائدین ایل رمنا اور ریونت ریڈی کو اختلافات ختم کرنے کا مشورہ

تلگو دیشم قائدین ایل رمنا اور ریونت ریڈی کو اختلافات ختم کرنے کا مشورہ

مسائل پر رپورٹ تیار کرنے قائدین کو ہدایت ، نارا لوکیش نیشنل جنرل سکریٹری
حیدرآباد ۔ 15 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : تلگو دیشم کے قومی جنرل سکریٹری مسٹر نارا لوکیش نے تلنگانہ تلگو دیشم کے صدر ایل رمنا اور ورکنگ پریسیڈنٹ ریونت ریڈی کے درمیان جاری سرد جنگ پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے پارٹی کے استحکام کے لیے دونوں قائدین کو اختلافات فراموش کرنے کا مشورہ دیا ۔ مختلف مسائل پر رپورٹ تیار کرنے کی پارٹی قائدین کو ہدایت دی ۔ صدر تلگو دیشم پارٹی و چیف منسٹر آندھرا پردیش کی مصروفیات کے باعث ان کے فرزند و قومی جنرل سکریٹری تلگو دیشم پارٹی مسٹر نارا لوکیش نے تلنگانہ تلگو دیشم پارٹی پر اپنی توجہ مرکوز کی ہے اور تلنگانہ تلگو دیشم قائدین کا ماہانہ اجلاس طلب کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ چند دن قبل این ٹی آر ٹرسٹ بھون میں لوکیش نے تلنگانہ تلگو دیشم پارٹی کا اجلاس طلب کیا ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ مستقبل کی حکمت عملی تیار کرنے سے قبل لوکیش نے پارٹی قائدین میں پائے جانے والے گروپ بندی اور اختلافات پر اپنی ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ میں پارٹی کیڈر تلگو دیشم کے لیے اثاثہ ہے تاہم قائدین میں اتحاد کے فقدان اور تال میل نہ ہونے کی وجہ سے کیڈر میں مایوسی پائی جاتی ہے ۔ تلگو دیشم کے رکن پارلیمنٹ اور 12 ارکان اسمبلی کی ٹی آر ایس میں شمولیت کے بعد پارٹی کی سرگرمیاں ٹھپ ہو کر رہ گئی ہے ۔ اس نازک حالت میں پارٹی کے سینئیر قائدین کو چاہئے کہ وہ اپنے اپنے نظریاتی اختلافات کو فراموش کرتے ہوئے پارٹی مفادات کے لیے متحد ہوجانے کا مشورہ دیا ہے ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ تلنگانہ کے چند تلگو دیشم قائدین نے ایل رمنا اور ریونت ریڈی میں اختلافات ہونے کی صدر تلگو دیشم مسٹر این چندرا بابو نائیڈو سے شکایت کی ہے ۔ آندھرا پردیش میں اپنی مصروفیات دہلی اور بیرونی ممالک کے دوروں کے باعث چندرا بابو نائیڈو نے اپنے فرزند نارا لوکیش کو تلنگانہ میں راستہ بھٹکنے والی تلگو دیشم کو دوبارہ پٹری پر لانے کی ذمہ داری سونپی ہے ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ نارا لوکیش نے اپنے پہلے ہی اجلاس میں پارٹی قائدین کو گروپ بندیوں کے خلاف سخت انتباہ دیا ہے ۔ عوام کے درمیان پہونچنے اور حکمران ٹی آر ایس کا مقابلہ کرنے کے لیے چند قائدین کو خواتین ، نوجوانوں ، کسانوں ، اقلیتوں اور پسماندہ طبقات طلبہ کے مسائل کا جائزہ لیتے ہوئے رپورٹس تیار کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ انہیں رپورٹس کے اساس پر عوام کے درمیان پہونچ کر ان کے مسائل پر احتجاجی رخ اختیار کرتے ہوئے عوام کے دلوں میں دوبارہ جگہ بنانے کی ہدایت دی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT