Tuesday , June 27 2017
Home / Top Stories / تمام انتخابات بیک وقت منعقد کرنے کی تائید

تمام انتخابات بیک وقت منعقد کرنے کی تائید

رواداری، تنوع اور تکثیریت ہندوستان کی طاقت ، یوم جمہوریہ پر قوم سے صدرجمہوریہ کا خطاب

نئی دہلی ۔ 25 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) صدرجمہوریہ ہند پرنب مکرجی نے آج پارلیمنٹ اور اسمبلیوں کے انتخابات ایک ساتھ منعقد کرنے کی اور اعلیٰ مالیتی کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے اقدام کی تائید کی۔ انہوں نے الیکشن کمیشن سے خواہش کی کہ بیک وقت انتخابات کی تجویز پر تمام سیاسی پارٹیوں سے مشاورت کے بعد پیشرفت کی جائے۔ یوم جمہوریہ کی شام قوم سے خطاب کرتے ہوئے صدرجمہوریہ نے کہا کہ ملک کی طاقت تکثیریت اور تنوع میں مضمر ہے جو روایتی اعتبار سے ایک ہندوستانی کو معقولیت پسند بناتی ہے، متعصب نہیں۔ انہوں نے کہا کہ کئی نظریات، افکار اور فلسفے صدیوں سے اس ملک میں ایک دوسرے کے ساتھ پرامن مسابقت میں مصروف رہے ہیں۔ ایک دانشور اور مفکر ذہنیت کی ضرورت ہے تاکہ جمہوریت نشوونما پا سکے۔ پرنب مکرجی نے ہندوستانی جمہوریت کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے پارلیمنٹ اور ریاستی اسمبلیوں کی کارروائی میں خلل اندازی کے خلاف خبردار کیا اور کہا کہ اس سے جمہوریت کی اہمیت کم ہوجاتی ہے لیکن انہوں نے تسلیم کیا کہ احتجاج کے حق کو تمام نظام تسلیم کرتے ہیں۔ بیشک یہ تمام نظام بے عیب نہیں ہیں۔ کوتاہیوں کی شناخت اور ان کی اصلاح ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ اعتماد کی عمارت کو مستحکم کرنا چاہئے۔ وقت آ گیا ہیکہ انتخابی اصلاحات پر تعمیری مباحث منعقد کئے جائیں اور آزادی کے ابتدائی برسوں سے جاری اس روایت میں اصلاح کرتے ہوئے پارلیمنٹ اور اسمبلیوں کے انتخابات ایک ساتھ منعقد کئے جائیں۔ اعلیٰ مالیتی کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے بارے میں تبصرہ کرتے ہوئے صدرجمہوریہ نے کہا کہ اس سے معیشت میں ’’عارضی‘‘ انحطاط پیدا کیا ہے لیکن نظام کو شفاف بھی بنایا ہے۔ کالے دھن اور کرپشن کے خلاف جنگ کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کو دیگر ممالک سے آگے لے جایا جاسکتا ہے بشرطیکہ ہم تبدیلیاں اختیار کریں۔ انہوں نے کہا کہ نظریات کی یک رنگی سے زیادہ صحتمند جمہوریت کیلئے رواداری، صبروتحمل اور دوسروں کے احترام کی اقدار کی پابندی ضروری ہے۔ یہ اقدار ہر ہندوستانی کیلئے دل و دماغ میں اترجانی چاہئیں۔ انہیں روادار، سمجھدار اور ذمہ دار بنانا چاہئے۔ انہوں نے عوام کو نصیحت کی کہ مسلسل دیکھ بحال اور نشوونما کے ذریعہ آزادی کے درخت کی آبیاری کریں۔ انہوں نے کہا کہ شہریوں کی تین نسلیں آزادی کے بعد عالم وجود میں آچکی ہیںجن پر ماضی کا بوجھ لادا نہیں جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت نے ہم میں سے ہر ایک کو حقوق عطا کئے ہیں لیکن ہر حق کے ساتھ چند فرائض بھی عائد ہوتے ہیں جن کی ادائیگی ضروری ہے۔ انہوں نے نوجوانوں سے کہا کہ وہ پرجوش اور پرامید ہوجائیں تاکہ مقاصد کا حصول ممکن ہوسکے۔ مکرجی نے کہا کہ ملک کو دہشت گردی کی سیاہ طاقتوں کو شکست دینے کیلئے سخت جدوجہد کرنی ہوگی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT