Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / تنزیل احمد قتل کیس میں مزید 2 ملزمین گرفتار حملہ میں زخمی بیوہ کا بھی انتقال

تنزیل احمد قتل کیس میں مزید 2 ملزمین گرفتار حملہ میں زخمی بیوہ کا بھی انتقال

بیجنور (اترپردیش) ۔ 13 ۔ اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نیشل انوسٹیگیشن ایجنسی کے عہدیدار تنزیل احمد اور ان کی اہلیہ پر حملہ کے الزام میں مزید دو افراد کو گرفتار کرلیا جبکہ اس حملہ میں زخمی مرحوم کی بیوہ آج فوت ہوگئی ۔ اس کیس میں گرفتار ملزمین کی تعداد 4 تک پہنچ گئی ۔ گو کہ اصل سازشی کو پکڑنے کیلئے پولیس کی کوشش جاری ہے ۔ اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ پولیس مسٹر دھرم ویر سنگھ نے بتایا کہ آج صبح رضوان اور تنظیم کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کردیا گیا ۔ انہوں نے یہ ادعا کیا کہ قتل کی سازش میں رضوان اور تنظیم بھی ملوث ہیں جس کی بناء ان کی گرفتاری عمل میں لائی گئی اور اصل سازشی منیر کو پکڑ نے کیلئے پولیس کو متعدد ٹیموں کو متعین کیا گیا ہے ۔ اترپردیش پولیس نے کل یہ دعویٰ کیا ہے کہ ریحان کو گرفتار کرکے قتل کیس کا پر اسرار معمہ حل کرلیا گیاہے جبکہ ریحان مقبول تنزیل احمد کے بہنوئی کا بھانجہ ہے اور ایک ملزم زینول کا یہ استدلال ہے کہ گھریلو تنازعات کی وجہ سے جرم کا ارتکاب کیا گیا ہے ۔ دریں اثناء احمد کی اہلیہ فرزانہ خاتون جو کہ 3 اپریل کے بہیمانہ حملہ میں زخمی ہوگئی تھیں۔ آج صبح ہاسپٹل میںجانبر نہ ہو سکیں۔ منصوبہ بند حملے میں موٹر سیکل پر سوار قاتلوں نے 45 سالہ این آئی اے عہدیدار پر 24 گولیاں اور انکی اہلیہ فرزند پر 4 گولیاں داغ دیں جبکہ کار کی عقبی نشست پر بیٹھے ہوئے ان کی 14 سالہ دختر اور 12 سالہ لڑکا یہ ہولناک منظر دیکھتے رہے۔ یہ خاندان 3 اپریل کی نصف شب ایک شادی کی تقریب میں شرکت کے بعد واپس آرہا تھا کہ راستہ میں انہیں نشانہ بنایا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT