Saturday , October 21 2017
Home / Top Stories / تھائی لینڈ میں سلسلہ وار دھماکے، چار افراد ہلاک

تھائی لینڈ میں سلسلہ وار دھماکے، چار افراد ہلاک

24 گھنٹوں میں پانچ جنوبی صوبوںمیں کم از کم 11دھماکے، پولیس کا بیان
بنکاک ۔ 12 اگست (سیاست ڈاٹ کام) چند گھنٹوں میں مربوط بم دھماکوں کے سلسلہ نے تھائی لینڈ کے مشہور سیاحتی ٹاؤنس بشمول پھوکٹ کو دہلا دیا جس کے نتیجہ میں 4 افراد ہلاک اور کم از کم 34 دیگر زخمی ہوگئے۔ اتفاق کی بات ہیکہ چند روز قبل ہی ملک نے ووٹنگ کے ذریعہ ملٹری تائید والے دستور کو قبول کرلیا ہے۔ گذشتہ 24 گھنٹوں میں پانچ جنوبی صوبوں میں کم از کم 11 بم دھماکے ہوئے جن میں سے کئی دہرے دھماکے پیش آئے۔ آج صبح تفریح گاہ ہواہین میں کلاک ٹاور کے قریب جو شہر کا علامتی مقام ہے، دو بم دھماکے ہوئے جس میں ایک فرد ہلاک اور تین دیگر زخمی ہوئے۔ پولیس لیفٹننٹ کرنل سمیر یوسمران کے مطابق دھماکے اس وقت ہوئے جبکہ اسی مقام پر پولیس مصروف کار تھی اور یہ دھماکے ایک دوسرے سے زیادہ فاصلہ پر نہیں ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ تقریباً 200 میٹر کی دوری پر گذشتہ رات دیر گئے دو دھماکے ہوئے تھے جبکہ بیرونی سیاح مقامی شراب خانوں سے نکل کر اپنی ہوٹلوں کو واپس جارہے تھے۔ پولیس عہدیدار نے بتایا کہ ایک بار کے روبرو دھماکے سے کم از کم 11 افراد زخمی ہوئے جن میں زیادہ تر بیرونی شہری ہیں۔ ان کے علاوہ ایک خاتون ہلاک ہوگئی۔

زخمیوں میں کوئی ہندوستانی ہونے کی اطلاع نہیں ہے۔ ہواہین مقبول ساحلی تفریح گاہ ہے جو تھائی دارالحکومت بنکاک کے تقریباً 145 کیلو میٹر جنوب مغرب میں واقع ہے۔ اس شہر میں کئی انٹرنیشنل ہوٹلس ہیں جن میں میریٹ، ہلٹن اور حیات شامل ہیں۔ سورت تھانی اور ترانگ علاقہ میں بھی تین دھماکے پیش آئے جہاں مزید دو افراد ہلاک ہوئے۔ پاتونگ ساحل کے پاس پھوکٹ ٹاؤن کی مقبول تفریح گاہ میں بھی بم دھماکوں کی اطلاع ملی جہاں چند افراد زخمی ہوئے لیکن کوئی جانی  نقصان نہیں ہوا۔ اس طرح ضلع موانگ میں گورنر کی قیامگاہ کے قریب بھی ایک دھماکہ ہوا۔ یہ دھماکے ایسے وقت پیش آئے ہیں جبکہ سارا ملک کوئین سیریکیٹ کی سالگرہ کی خوشی منارہا ہے۔ اس دن کو یہاں ’مدرس ڈے‘ کے طور پر بھی منایا جاتا ہے۔ یہ پہلی مرتبہ ہیکہ ہواہین اور پھوکٹ جیسے مقبول سیاحتی مقامات کو بم دھماکوں کا نشانہ بنایا گیا۔ کسی نے بھی ان دھماکوں کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے اور یہ ابھی واضح نہیں کہ یہ سب مربوط دھماکے ہوئے۔ تھائی پولیس نے کہا کہ بم دھماکے مقامی طور پر سبوتاج کی کارروائی ہے اور یہ دہشت گردانہ نوعیت کے نہیں ہیں۔

TOPPOPULARRECENT