Sunday , September 24 2017
Home / ہندوستان / تھوک مہنگائی میں 3ماہ بعد اضافہ

تھوک مہنگائی میں 3ماہ بعد اضافہ

نئی دہلی، 16 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) مینوفیکچرنگ اور ایندھن اور توانائی کے زمرے کی مصنوعات کی قیمتیں بڑھنے سے گزشتہ سال دسمبر میں تھوک قیمت پر مبنی افراط زر کی شرح بڑھ کر 3.39 فیصد پر پہنچ گئی۔ تاہم، نوٹ بندي کی وجہ سے نقد رقم کی کمی کی وجہ سے مانگ اترنے سے سبزیاں اور پیاز کی قیمت میں زبردست گراوٹ سے کھانے کی اشیاء کی تھوک مہنگائی کی شرح صفر سے 0.70 فیصد نیچے رہی۔ تین ماہ مسلسل گراوٹ کے بعد تھوک مہنگائی میں اضافہ دیکھا گیا ہے ۔ اس سے قبل گذشتہ نومبر میں تھوک مہنگائی کی شرح 3.15 فیصد رہی تھی جبکہ دسمبر 2015 میں یہ صفر سے 1.06 فیصد نیچے درج کی گئی تھی۔ کامرس اینڈ انڈسٹری کی وزارت کی طرف سے آج یہاں جاری اعداد و شمار کے مطابق، گذشتہ سال دسمبر میں سبزیوں کی قیمت میں دسمبر 2015 کے مقابلے میں 33.11 فیصد کمی واقع ہوئی۔ پیاز کی قیمت میں 37.20 فیصد کی گراوٹ درج کی گئی۔ پھلوں کے دام بھی محض 0.04 فیصد ہی بڑھے ۔ انڈے اور گوشت مچھلی کی قیمت میں 2.73 فیصد اور دودھ کے دام میں 4.11 فیصد کا اضافہ درج کیا گیا۔ وہیں، خراب نہ ہونے والی کھانے کی اشیاء کی قیمتوں میں زیادہ اضافہ درج کیا گیا۔ موٹے اناج 7.49 فیصد، چاول 4.38 فیصد، گندم 12.82 فیصد، دالیں 18.12 فیصد اور آلو 26.42 فیصد مہنگے ہو ئے ۔

TOPPOPULARRECENT