Friday , July 28 2017
Home / سیاسیات / تیجسوی کے خلاف کرپشن کا مقدمہ ، جے ڈی یو ۔ آر جے ڈی میں کشیدگی

تیجسوی کے خلاف کرپشن کا مقدمہ ، جے ڈی یو ۔ آر جے ڈی میں کشیدگی

 

چینی سڑکوں کی تعمیر سے ہندوستانی مفادات متاثر ، اپوزیشن قائدین سے حکومت کی بات چیت
پٹنہ ۔ /14 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) جے ڈی یو نے اپنی مخلوط حکومت کی شریک آر جے ڈی پر تیجسوی کے خلاف کرپشن کے مقدمہ کی بنیاد پر دباؤ میں شدت پیدا کردی ہے اور ڈپٹی چیف منسٹر کو ہدایت دی ہے کہ وہ اپنا موقف واضح کریں ۔ سی بی آئی کی تحقیقات میں ہوٹل کیلئے اراضی کے اسکام میں تیجسوی کو ملزم قرار دیا گیا ہے ۔ اس مسئلہ پر مخلوط حکومت میں شریک جے ڈی یو اور آر جے ڈی کے درمیان کشیدگی پیدا ہوگئی ہے ۔ آر جے ڈی جس کو 80 ارکان اسمبلی کی طاقت پر ناز ہے جے ڈی یو کے ترجمان نے کہا کہ اسے یہ نہیں بھولنا چاہئیے کہ 2010 ء کے ریاستی انتخابات میں اس کے ارکان اسمبلی کی تعداد 22 ہوگئی تھی ۔ 2015 ء کے انتخابات میں اس میں اس لئے اضافہ ہوا کیونکہ نتیش کمار پر لوگوں کو بھروسہ تھا ۔ جے ڈی یو کے 71 ارکان اسمبلی ہے جبکہ مخلوط حکومت کے ایک اور شراکت دار کانگریس کے 27 ارکان ہیں ۔ جبکہ ایوان اسمبلی میں بی جے پی کے 53 ارکان ہیں ۔ آر جے ڈی کہہ چکی ہے کہ وہ جے ڈی یو کے ساتھ اس مسئلہ پر مفاہمت نہیں کرے گی جبکہ نتیش کمار کا موقف یہ ہے کہ وہ کرپشن کے مسئلہ پر کسی سے بھی سمجھوتہ نہیں کرسکتے ۔ جے ڈی یو کے ترجمان نرج کمار نے بالواسطہ طور پر لالو پرساد اور تیجسوی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کو خاموش کرنے کیلئے دونوں ملزمین کو اپنا موقف واضح کرنا چاہئیے اور اپنے بے قصور ہونے کا ثبوت دینا چاہئیے ۔ حکومت نے آج اپوزیشن قائدین سے کہا کہ چین کی جانب سے بین الاقوامی سرحد کے قریب سڑکوں کی تعمیر سے ہندوستان کے دفاعی مفادات متاثر ہورہے ہیں ۔

مشیر قومی سلامتی اجیت دوول اپوزیشن قائدین کے سامنے حکومت کا موقف واضح کریں گے ۔ اپوزیشن قائدین سے مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ ، وزیر خارجہ سشما سواراج ، وزیر دفاع ارون جیٹلی اور اعلیٰ سطحی عہدیداروں بشمول اجیت دوول اور معتمد خارجہ جئے شنکر نے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس سے قبل بات چیت کی اور تفصیل سے چین کی پیپلز لبریشن آرمی کے ساتھ ہندوستانی فوج کی صف آرائی کی تفصیلات واضح کیں ۔ اعلیٰ سطحی وزرا ء نے اپوزیشن قائدین سے کہا کہ اجیت دوول 26 تا 27 جولائی چین کا دورہ کریں گے اور ہندوستان کا موقف چینی قائدین پر واضح کریں گے ۔ کانگریس قائدین غلام نبی آزاد اور آنند شرما نے حکومت کے ساتھ اجلاس کے بعد ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حکومت کی پالیسی کے بارے میں اپوزیشن کے شکوک و شبہات پریس کے سامنے ظاہر کئے اور کہا کہ چاہے چین ہو یا کشمیر ملک کو اولین ترجیح حاصل ہونی چاہئیے ۔ چین کے ساتھ سفارت کاری کے باوجود تعلقات میں کشیدگی پیدا ہوگئی ہے ۔ کانگریس قائدین نے پارلیمنٹ کے آئندہ اجلاس میں یہ مسئلہ اٹھانے کا اعلان کیا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT