Wednesday , May 24 2017
Home / Top Stories / تیستاندی آبی معاہد ہ پر وزیر اعظم کی یقین دہانی پر ممتا بنرجی ناراض

تیستاندی آبی معاہد ہ پر وزیر اعظم کی یقین دہانی پر ممتا بنرجی ناراض

بنگلہ دیش کو تیستا کے علاوہ دوسرے متبادل پر غور کرنے کا مشورہ ‘ کورسا ندی سے پانی کی سربراہی کا پیشکش‘ چیف منسٹر مغربی بنگال کا بیان
کلکتہ 8اپریل(سیاست ڈاٹ کام) تیستاندی آبی معاہدہ پروزیر اعظم نریندر مودی کی یقین دہانی پر بنگال کی وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ تیستاندی شمالی بنگال کیلئے زندگی ہے اور اس ندی پر ہی پورے علاقے کی زراعت منحصر ہے ۔اس لیے اس حقیقت کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا ہے ۔بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ ان دنوں ہندوستان کے دورے پر ہیں ۔ممتا بنرجی نے کہا کہ تیستاندی میں بہت ہی کم پانی ہے ، یہ ہمارے لیے لائف لائن ہے ۔تاہم وزیرا علیٰ نے کہا کہ دیگر قومی ندیوں کا رخ بنگلہ دیش کی طرف موڑا جا سکتا ہے ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بنگلہ دیش کی پریشانی پانی ہے ”تیستاندی ” نہیں ہے ۔اس لیے آپ کا مسئلہ ختم کرنے کیلئے کوئی اور متبادل پر غور کرنے کو ہم تیار ہیں ۔ہمیں یہ دیکھنا چاہیے ہندو بنگلہ دیش کے درمیان کئی ندیاں ہیں جن سے پانی حاصل کیا جا سکتا ہے ۔ کل وزیر اعظم نریندر مودی نے مشترکہ پریس کانفرنس میں شیخ حسینہ کو یقین دہانی کراتے ہوئے کہا تھا کہ ہندوستان تیستاندی پانی کی شراکت کے مسئلہ کو حل کرنے کو تیار ہے ۔ شیح حسینہ کے ہندوستان دورہ کے دوران تیستاندی پانی معاہدہ ہونے والا تھا مگرممتا بنرجی کے غیر لچکدر رویہ کی وجہ سے یہ معاہدہ نہیں ہوسکا۔ وزیر اعظم مودی نے کہا تھاکہ”میں بہت خوش ہوں کہ اس موقع پر بنگال کی وزیرا علیٰ ممتا بنرجی یہاں موجود ہیں ، وہ بنگلہ دیش کے تئیں گرم جوشی پر مبنی رویہ رکھتی ہیں ۔میں آپ کو(شیخ حسینہ)اور بنگلہ دیش کی عوام کو یقین دلاتا ہوں کہ جلد ہی تیستاندی آبی معاہدہ طئے پایا جائے گا ۔یہ معاہدہ صرف ہندوستان اور بنگلہ دیش حکومت مل کر کرسکتی ہے ۔ تیستاندی بنگال اور بنگلہ دیش دونوں میں بہتا ہے ۔اگر یہ معاہدہ ہوجائے گا تو دونوں ملکوں کے درمیان برابر پانی فراہم کرنا ہوگا ۔

بنگلہ دیش نے وزیر اعظم مودی کی یقین دہانی کا خیر مقدم کیا ہے ۔خیال رہے کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش کے درمیان 22معاہدے ہوئے ہیں۔ وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے وزیر اعظم اور وزیر خارجہ ششما سوراج سے کہا ہے کہ تیستا ندی میں پانی بہت ہی کم ہے اس لیے بنگلہ دیش کو پانی فراہم کرنے میں دوسرے متبادل پر غور کرنا چاہیے ۔ممتا بنرجی نے وزیرا عظم مودی کی موجودگی میں شیخ حسینہ سے کہا کہ بنگلہ دیش کی پریشانی پانی ہے نہ کہ تیستا،اس لیے ہمیں متبادل پر غور کرنا چاہیے ۔ترنمول کانگریس کے ذرائع کے مطابق راشٹرپتی بھون میں شیخ حسینہ کے اعزاز میں منعقد عشائیہ کے موقع پر ممتا بنرجی نے بنگلہ دیش کے سامنے تجویز پیش کی تورساندی کا پانی فراہم کیا جاسکتا ہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودی کے ذریعہ شیخ حسینہ کے اعزاز میں منعقد کئی پروگراموں میں ممتا بنرجی بھی موجود تھیں ۔مودی کے طرف سے ظہرانہ اور مشترکہ پریس کانفرنس میں بھی ممتا بنرجی موجود تھیں ۔2011میں ممتا بنرجی نے سابق وزیرا عظم منموہن سنگھ کے ساتھ اچانک ڈھاکہ جانے سے انکار کردیا ۔اس موقع پر بھی دونوں ملکوں کے درمیان تیستاندی آبی معاہد ہونے والاتھا۔ بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ اور ممتا بنرجی دونوں ہم زبان و یکسا ں کلچر کی حامل ہیں ۔بنگلہ دیش ہائی کمشنر کی جانب سے جمعہ کو منعقد عشائیہ میں شیخ حسینہ نے کہا تھا کہ وہ ممتا بنرجی سے ملاقات کرنے کیلئے پر جوش ہیں ۔ تیستاندی آبی معاہدہ بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ کی مستقبل کی سیاست کیلئے بھی کافی اہم ہے ۔کیوں کہ بنگلہ دیش کے اگلے سالوں میں انتخابات ہونے والے ہیں ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT