Friday , June 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / تیسرا ٹسٹ ‘ پجارا کی ڈبل سنچری ‘وردھی مان ساہا کی سنچری

تیسرا ٹسٹ ‘ پجارا کی ڈبل سنچری ‘وردھی مان ساہا کی سنچری

میچ پر ہندوستان کی گرفت مضبوط ‘ ساتویں وکٹ کی رفاقت میں 199 رنز جوڑے ۔ آسٹریلیائی بولرس بے اثر
رانچی 19 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) چھتیشور پجارا کی شاندار ڈبل سنچری اور ان کے ساتھ وردھی مان ساہا کی شاندار سنچری نے ہندوستان کو آسٹریلیا کے خلاف تیسرے ٹسٹ کے چوتھے دن کا کھیل ختم ہونے تک مکمل گرفت دیدی ہے ۔ ہندوستان نے آسٹریلیا کے خلاف اپنی پہلی اننگز 9 وکٹس پر 603 رنوں پر ڈیکلر کرنے کے بعد دوسری اننگز میں آسٹریلیا کے دو وکٹس بھی حاصل کرلئے ہیں۔ ہندوستان کو پہلی اننگز میں آسٹریلیا کے خلاف 152 رنوں کی سبقت حاصل ہوگئی تھی ۔ آسٹریلیا کی دوسری اننگز میں بولرس حرکت میں آتے ہوئے دکھائی دئے جبکہ آج کا کھیل ختم ہونے تک آسٹریلیا نے محض 23 رنوں کے عوض اپنے دو وکٹس گنوادئے ہیں۔ رویندر جڈیجہ یہ دونوں وکٹس حاصل کئے ۔ انہوں نے اوپنر ڈیوڈ وارنر 14 اور ناتھن لیان 2 کو پویلین واپس بھیج دیا ۔ کپتان ویراٹ کوہلی آسٹریلیا کے دو وکٹس گرنے پر بہت مسرور نظر آ رہے تھے اور انہوں نے اپنے زخمی کندھے کو تھپتھپاتے ہوئے عملا کل گلین میکس ویل کی جانب سے ان کا مضحکہ اڑائے جانے کا جواب دیا ہے ۔ اس میچ میں سب سے اہم مظاہرہ یقینی طور پر چھتیشور پجارا کا رہا جنہوں نے ناٹ آوٹ 202 رن بنائے ۔ انہوں نے گیارہ گھنٹوں سے زیادہ وقت تک وکٹ پر مقابلہ کیا ۔ انہوں نے 525 گیندوں کا سامنا کیا جو کسی ہندوستانی بلے باز کی جانب سے کھیلے جانے والی سب سے زیادہ تعداد ہے ۔ اس سے قبل یہ ریکارڈ راہول ڈراویڈ کا تھا جنہوں نے 495 گیندوں کا 2004 میں راولپنڈی میں پاکستان کے خلاف سامنا کیا تھا ۔سوراشٹر سے تعلق رکھنے والے پجارا نے اپنی اننگز کے دوران 21 چوکے لگائے ۔

یہ ان کی ٹسٹ کیرئیر کی تیسری ڈبل سنچری تھی ۔ انہوں نے وردھی مان ساہا کے ساتھ ساتویں وکٹ کی رفاقت میں 199 رنز جوڑے ۔ یہی رفاقت میچ کا رخ بدلنے والی ثابت ہو رہی ہے ۔ وردھی مان ساہا نے اپنے کیرئیر کے سب سے زیادہ 117 رن بنائے اور اس دوران انہوں نے بہترین بیٹنگ کا مظاہرہ کیا ۔ وکٹ کیپر بلے باز ساہا کیلئے یہ اپنے کیرئیر کی تیسری سنچری تھی ۔ انہوں نے 233 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے آٹھ چوکے اور ایک چھکا لگایا ۔ رویندر جڈیجہ نے تیز رفتار بیٹنگ کی اور 55 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے 54 رن بناکر اپنی ٹیم کو 150 سے زیادہ کی سبقت دلانے میں اہم رول ادا کیا ۔ پچ سے آسٹریلیائی بولرس کو کوئی مدد نہیں مل رہی تھی اور وہ ہندوستانی بلے بازوں کو روکنے میں ناکام نظر آ رہے تھے ۔ اس میچ میں آسٹریلیا کے بائیں ہاتھ کے اسپنر اسٹیو او کیف نے ریکارڈ 77 اوورس کی بولنگ کی اور 196 رنوں کے عوض تین وکٹس حاصل کئے ۔ او کیف کے اوورس ہندوستانی سرزمین پر کسی بیرونی بولر کے سب سے زیادہ اوورس ہیں۔ آسٹریلیا کیلئے پیٹ کمنس کامیاب ترین بولر رہے جنہوں نے 39 اوورس میں 106 رنز خرچ کرتے ہوئے چار وکٹس حاصل کئے ۔ آسٹریلیا کے بولرس میں وہی ہندوستانی بولرس پر قدرے اثر انداز ہونے میں کامیاب رہے ۔ آسٹریلیا کیلئے ناتھن لیان ایک بار پھر ناکام رہے ۔ انہوں نے 46 اوورس کی بولنگ کی لیکن 163 رنز کے عوض صرف ایک وکٹ لینے میں کامیاب رہے ۔ ہندوستانی ٹیم نے آج بھی مدافعانہ طرز اختیار کیا تھا اور آج اس ٹیم نے 80 اوورس کا سامنا کرتے ہوئے 243 رنز ہی اسکور کئے ۔ ٹیم کی کوشش یہی تھی کہ اپوزیشن کو پانچویں دن مشکل حالات میں بیٹنگ کرنے پر مجبور کیا جائے اور اس منصوبے میں ٹیم کامیاب رہی ۔ اپنی طاقتور بیٹنگ لائین اپ کی وجہ سے آسٹریلیا یہ امید کرسکتی ہے کہ وہ آخری دن صبرآزما بیٹنگ کرتے ہوئے میچ ڈرا کرنے میں کامیاب ہوجائے ۔ تاہم پانچویں دن پچ بلے بازوں کیلئے مشکلات پیدا کرسکتی ہے اور آسٹریلیا کو اننگز کی شکست سے بچنے مزید 129 رنز درکار ہیں۔

وین رونی ‘ مانچسٹر کیلئے ہنوز کارآمد ‘ گیری نیویلی
مانچسٹر 19 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) مانچسٹر یونائیٹیڈ کے سابق کپتان گیری نیویلی کا احساس ہے کہ آوٹ آف فارم وین رونی ہنوز ٹیم کیلئے کارآمد ہیں اور وہ کسی بھی وقت فارم میں آسکتے ہیں۔ رونی گذشتہ دنوں سے فارم میں نہیں ہیں حالانکہ وہ اپنی ٹیم کے سب سے زیادہ گول کرنے والے کھلاڑی ہیں۔ نیویلی نے کہا کہ ابھی یہ نہیں کہا جاسکتا کہ وین رونی کا کیرئیر ختم ہوگیا ہے ۔ وہ ہنوز ٹیم کیلئے اثاثہ ثابت ہوسکتے ہیں

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT