Saturday , March 25 2017
Home / کھیل کی خبریں / تیسرے ٹسٹ میچ میں جنوبی افریقہ کے خلاف آسٹریلیا کی کامیابی

تیسرے ٹسٹ میچ میں جنوبی افریقہ کے خلاف آسٹریلیا کی کامیابی

میزبان ٹیم پانچ اہم تبدیلیوں کے بعد دوبارہ فعال ، دو میچوں میں شکست کا انتقام لے لیا گیا

ایڈیلیڈ ۔ /27 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیا نے ایڈیلیڈ میں آج کھیلے گئے تیسرے ڈے ۔ نائٹ کرکٹ ٹسٹ میچ میں جنوبی آفریقہ کو سات وکٹ سے شکست دیدی ۔ اس طرح آسٹریلیا کی تازہ دم ٹیم نے پانچ ٹسٹ میچوں میں اپنی شکست کا سلسلہ ختم کردیا ۔ آسٹریلیا کی ٹیم ، پانچ اہم تبدیلیوں کے بعد دوبارہ فعال ہوگئی ہے ۔ اس ٹیم کو جنوبی افریقہ کے خلاف دو میچوں میں بدترین ہزیمت ہوئی تھی ۔ تاہم اہم تبدیلیوں کے بعد میزبانوں کو 127 رن سے کامیابی حاصل ہوئی ۔ جنہوں نے گزشتہ روز مہمانوں کی باری کو 250 کے اسکور پر آؤٹ کردیا تھا ۔اس سنسنی خیز میچ میں کامیابی کے لئے آسٹریلیا کو دو رن درکار تھے کہ کپتان اسٹیو اسمتھ 40 رنز کے انفرادی اسکور پر کیل ربورٹ کی گیند پر آؤٹ ہوگئے اور ہینڈس سومب میدان پر آئے ۔

میزبان ٹیم کو پہلی اننگز میں سنچری بنانے والے عثمان خواجہ کے علاوہ ڈیوڈ وارنر کے وکٹوں سے بھی محروم ہونا پڑا ۔ و ارنر نے 51 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے 47 رن بنائے ۔تاہم عثمان خواجہ جو پہلی اننگز میں آٹھ گھنٹوں تک کھیلے تھے دوسری اننگز میں صرف دو گیندوں کا سامنا کرسکے اور تبریز شمس کے ہاتھوں ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوگئے ۔ جنوبی افریقہ کی طاقور ٹیم کے مقابلے آسٹریلیا کی کامیابی آسان نہیں تھی ۔ کیونکہ اس کو اس فقیدالمثال سیریز میں دو مچیوں میں شکست ہوگئی تھی لیکن ٹیم میں تبدیلیوں نے ایک نئی طاقت بخشی ۔ اسٹیو اسمتھ کی ٹیم نے 124 کی سبقت ختم کرنے کے بعد جنوبی افریقہ کی مزاحمت کا بھرپور جواب دیا ۔ ایک مرحلہ پر جنوبی افریقہ نے سمجھا کہ دوسرے اوور میں انہوں نے رینشا کا وکٹ لے لیا ہے اور دعویٰ کیا کہ ہاشم آملہ نے سلپ پر انہیں کیچ آؤٹ کردیا ہے لیکن امپائر رچر ڈینیل برگ اس دعوے سے مطمئین نہیں ہوئے اور ایکشن ریپلے میں دکھایا کہ ورنن فیلانڈر کی گیند رینشا کے بیاٹ سے نہیں ٹکرائی تھی ۔

قبل ازیں جنوبی افریقہ نے جو پہلے دو ٹسٹ میچوں میں فقیدالمثال کامیابی حاصل کرچکا تھا تیسری کامیابی کی امید سے کھیل کا آغاز کیا اور تیسرے دن کے کھیل کے اختتام تک 56 رن بناسکا ۔ اسٹیفن کک نے بہترین کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے آسٹریلیائی بولنگ حملوں کا موثر جواب دیتے ہوئے کسی خوف و خطرہ کے بغیر اپنی سنچری مکمل کی ۔ آسٹریلیا کے خلاف یہ کک کی پہلی اور ٹسٹ کیرئیر کی دوسری سنچری تھی ۔ کک کو مچل اسٹارک نے چائے کے وقفہ سے قبل آؤٹ کیا ۔ ڈی کاٹ جنہوں نے آسٹریلیا کے بولرس بالخصوص اسپنر لیان کا پہلی دو اننگز میں بہترین مقابلہ کیا تھا ۔ اس مرتبہ بہتر مظاہرہ نہیں کرسکے ۔ نلنڈر بھی اسٹارک کے چار شکاروں میں شامل تھے جو 17 رن کے انفرادی اسکور پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوگئے ۔ کاگیسو رباڈا بھی صرف 9 گیندوں کا سامنا کرنے کے بعد ہیزل ووڈ کی گیند پر اس وقت آؤٹ ہوگئے جب میتھیو ویڈ نے خوبصورتی کے ساتھ چھلانگ لگاتے ہوئے کیچ لے لیا ۔ کک کے آؤٹ ہونے کے بعد اننگز ختم ہوگئی ۔ اسٹارک نے 80 رن دے کر چار وکٹس حاصل کیا ۔ اسپنر لیان کو 60 رن کے عوض تین وکٹس حاصل ہوئے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT