Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / تین اہم ریاستوں میں ہیلاری کلنٹن کو ٹرمپ پر سبقت

تین اہم ریاستوں میں ہیلاری کلنٹن کو ٹرمپ پر سبقت

الیکٹورل کالج کے درکار 270 نشانہ سے تین زائد ووٹس ملنا یقینی ۔ نومبر میں پولنگ تک حالات میں تبدیلی بھی ممکن
واشنگٹن 20 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) مختلف ریاستوں میں کنونشنس کے بعد اپنی مقبولیت میں اضافہ کرتی ہوئی ڈیموکریٹک صدارتی امیدوار ہیلاری کلنٹن نے تین اہم ریاستوں میں اپنا موقف مستحکم کرلیا ہے ۔ ان ریاستوں کو سوئنگ ریاستیں بھی کہا جاتا ہے ۔ ان تین ریاستوں میں موقف مستحکم ہونے کے باعث انہیں الیکٹورل کالج کے اتنے ووٹ مل سکتے ہیں جتنے امریکی صدر ہونے کیلئے ضروری ہیں۔ امریکہ کے ایک بڑے ذرائع ابلاغ ادارے نے یہ بات بتائی ۔ 68 سالہ ہیلاری کلنٹن نے تین سوئنگ ریاستوں نیو ہیمپ شائر ‘ پنسلوانیہ اور ورجینیا میں اپنا موقف مستحکم کرلیا ہے ۔ یہاں جملہ 37 الیکٹورل کالج ووٹس ہیں ۔ سی این این نے یہ اطلاع دی ہے ۔ ان ریاستوں سے ہیلاری کو 37 ووٹ ملیںگے اور انہیں ملنے والے الیکٹورل کالج ووٹوں کی تعداد 273 ہوجائیگی جبکہ وائیٹ ہاوز میں داخلہ کیلئے 270 الیکٹورل کالج ووٹس کی ضرورت ہوتی ہے ۔

سی این این کے سیاسی ڈائرکٹر ڈیوڈ چالیان نے یہ بات بتائی ۔ چالیان نے تحریر کیا ہے کہ اب مابقی جتنی ریاستیں باقی ہیں اگر ان تمام میں بھی ڈونالڈ ٹرمپ کو کامیابی ملتی ہے تب بھی وہ 270 ووٹوں کے نشانہ سے پیچھے ہی رہ جائیں گے ۔ ایسی صورت میں انہیں کم از کم ایک ایسی ریاست میں دوبارہ مقبولیت کے ساتھ کامیابی حاصل کرنی ہوگی جہاں     فی الحال ہیلاری کلنٹن کو سبقت حاصل ہے ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اب سے 8 نومبر کے درمیان حالات میں تبدیلی آسکتی ہے۔ 8 نومبر کو امریکی عوام اپنے 45 ویں صدر کا انتخاب کرنے ووٹ ڈالیں گے ۔ ایک تازہ ترین پول میں کہا گیا ہے کہ ڈونالڈ ٹرمپ کے خلاف ہیلاری کلنٹن کی سبقت میں کمی آئی ہے ۔ یہ سبقت 9 فیصد سے گھٹ کر 4 فیصد رہ گئی ہے ۔

کہا گیا ہے کہ الباما‘ الاسکا ‘ ارکنساس ‘ اڈاہو ‘ انڈیانا ‘ کنساس ‘ کینٹکی ‘ لوئیسانہ ‘ مسی سپی ‘ مسوری ‘ مونٹانا ‘ نیبراسکا ‘ نارتھ ڈکوٹا ‘ اوکلاہاما ‘ ساؤتھ کیرولینا ‘ساؤتھ ڈکوٹا ‘ ٹینیسی ‘ ٹیکساس ‘ ویسٹ ورجینیا اور ویومنگ ایسی ریاستیں ہیں جہاں ریپبلیکنس کو سبقت حاصل ہے۔ اس کے جملہ الیکٹورل کالج ووٹس 158 ہوتے ہیں۔ اریزونا ‘ جارجیا ‘ اوٹاہ میں 33 ووٹ ہیں اور یہاں بھی ریپبلیکنس کو تائید مل سکتی ہے ۔ فلوریڈا ‘ لووا ‘ نیواڈا ‘ اوہائیو ‘ نارتھ کیرولینا میں جملہ 74 ووٹس ہیں اور یہ ریاستیں ایسی ہیں جہاں ابھی دونوں ہی امیدواروں کو اپنی مقبولیت منوانی ہے ۔ ڈیموکریٹس کو جہاں تائید مل سکتی ہے ان میں کولوراڈو ‘ مشیگن ‘ نیو ہمپشائر ‘ پنسلوانیہ ‘ ورجینیا ‘ وسکونسن شامل ہیں ۔ یہاں جملہ 72 ووٹ ہیں۔ ڈیموکریٹس کا گڑھ سمجھی جانے والی ریاستوں میں کیلیفونیا ‘ کنکٹی کٹ ‘ ڈیلاویر ‘ ڈی سی ‘ ہوائی ‘ الینوائیس ‘ مین ‘ میری لینڈ ‘ مساؤچیسٹس ‘ نیوجرسی ‘ نیویارک ‘ اوریگان ‘ رہوڈ آئی لینڈ ‘ ورمونٹ ‘ واشنگٹن ‘ منیسوٹا اور نیو میکسیکو شامل ہیں۔ ان ریاستوںمیں جملہ 201 الیکٹورل کالج ووٹس ہیں۔

TOPPOPULARRECENT