Monday , August 21 2017
Home / دنیا / تین بنیادی معاہدوں پر موقف کی نظرثانی کااشارہ

تین بنیادی معاہدوں پر موقف کی نظرثانی کااشارہ

ہندوستان کے تین معاہدوں کے بارے میںاندیشوں کے ازالہ کا تیقن ‘ پاریکر کی پریس کانفرنس
واشنگٹن۔13ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان نے اشارہ دیا کہ امریکہ کو تین حساس دفاعی بنیادی معاہدوں کے بارے میں اپنے موقف پر نظرثانی کرنی ہوگی اور بعض مسائل کے بارے میں اندیشوں کا ازالہ کرنا ہوگا کہ امریکی محکمہ دفاع پنٹگان ان کی یکسوئی کرے گا ۔ وزیر دفاع منوہر پاریکر کے دورہ امریکہ کا حال ہی میں اختتام ہوا جس کے دوران انہوں نے وزیر دفاع امریکہ ایسٹن کارٹر کے ساتھ وسیع تر مسائل پر تفصیل سے بات چیت کی ۔ دونوں ممالک کے عہدیدار بھی اس مثبت تحریک میں شریک تھے ۔ تین دفاعی معاہدہوں کی تجویز ہندوستان کو امریکہ کی جانب سے پیش کی گئی ہے جس کی حکومت ہند کی جانب سے اب تک مخالفت کی جارہی تھیں ۔ تینوں بنیادی معاہدے جن کی تجویز پنٹگان نے پیش کی ہے ‘ ترسیل اور دفاعی یادداشت مفاہمت کی معلومات میں شراکت داری کے بارے میں ہے اور دفاعی تائیدی معاہدہ و بنیادی باہمی تبادلے اور تعاون کا معاہدہ کے سلسلہ میں ہے ۔ ہندوستان نے بعض تحفظات اور اندیشے چند مسائل کے بارے میں ظاہر کئے ہیں ۔

وزیر دفاع نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امریکہ کے اپنے دورہ کے بارے میںایک سوال کا جواب دیتے ہوئے گذشتہ ہفتہ کہا تھا کہ ہم نے کہہ دیا ہے کہ ہم ضروری غور کے بعد اگر ’’ٹکنالوجی کی منتقلی کا طریقہ کار‘‘ مناسب نظرآئے تو معاہدہ پر نظرثانی کی جاسکتی ہے ۔ امریکی سفیر برائے ہندوستان رچرڈ ورما اس ملاقات کے وقت موجود تھے جو وزیردفاع منوہر پاریکر اور وزیر دفاع امریکہ ایسٹن کارٹر کے درمیان ہوئی تھی ۔ انہوں نے کہاکہ ہم بنیادی معاہدوں پر 2016ء میں ہی پیشرفت دیکھنا چاہتے ہیں ۔ ہم نے ہندوستان کو انتہائی پُرکشش تجویز پیش کی ہے جو ہندوستان کے بہترین مفاد میں اور خود امریکہ میں مفاد میں ہے ۔ چنانچہ اگلی سطح کی ٹکنالوجی پر مبنی تعاون کے بارے میں بات چیت کے انعقاد سے پہلے ان معاہدوں پر دستخط ہوجانا چاہیئے ۔ اس سے اشارہ ملتا ہے کہ امریکہ مثبت رویہ اختیار کررہا ہے ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ دفاعی تعاون اسی رفتار سے جاری رہے گا ‘ چاہے معاہدوں پر دستخط ہوں یا نہ ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ معاہدہ صرف وسیع تر سطح پر برآمدات کو کنٹرول کرنے کے لئے ہے ۔ سفیر امریکہ برائے ہندوستان رچرڈ ورما ہندوستان کے اخباری نمائندوں کے سوالوں کا جواب دے رہے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT