Friday , September 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / ثانیہ ۔ بھوپنا جوڑی سیمی فائنل میں ، ہاکی ٹیم کا آج کوارٹر فائنل

ثانیہ ۔ بھوپنا جوڑی سیمی فائنل میں ، ہاکی ٹیم کا آج کوارٹر فائنل

ریوڈی جنیرو ۔ 13اگسٹ ۔(سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی ٹینس اسٹار ثانیہ مرزا اور روہن بھوپنا نے ریو اولمپکس کے مکسڈ ڈبلز کے کوارٹر فائنل میں شاندار مظاہرہ کرتے ہوئے برطانیہ کے اینڈی مرے اور ان کی ساتھی ہیتر واٹسن کو راست سیٹوں میں 6-4، 6-4 سے شکست دیکر سیمی فائنل میں رسائی حاصل کرلی ہے ۔ مرے جوڑی کے خلاف شاندار مظاہرے کے ذریعہ ثانیہ ۔ بھوپنا جوڑی کے نہ صرف حوصلے بلند ہوئے ہیں بلکہ ایک اور کامیابی کا مطلب اس جوڑی کا میڈل حاصل کرنا یقینی ہوجائے گا ۔ سیمی فائنل میں ثانیہ ۔ بھوپنا جوڑی کو اگر شکست بھی ہوتی ہے تو وہ برونز میڈل کیلئے کوالیفائی کرجائیں گے ۔ ٹینس میں کامیابی کے بعد ہندوستانی شائقین کو مزید جشن منانے کا موقع فوری بعد ملے جب قومی باکسر وکاس کرشنن نے راؤنڈ 16 کے مقابلے میں ترکی کے اندرسیپل کو بہ آسانی شکست دیتے ہوئے کوارٹر فائنل میں رسائی حاصل کرلی ہے ۔ وکاس نے اس مقابلے کے تینوں راؤنڈس میں اپنی کامیابی درج کروائی ۔ نشانہ بازی میں ہندوستان کیلئے مایوس کن نتائج رہے ، جیسا کہ اتنو داس کو شکست برداشت کرنی پڑی ۔ ٹریک فیلڈ میں بھی ہندوستان کیلئے کوئی مثبت نتیجہ حاصل نہیں ہوا ، جیسا کہ اسپرنٹر دوتی چند اور محمد انس یحییٰ کے ہمراہ لانگ جمپر انکت شرما بھی کوالیفائنگ میچ میں شکست برداشت کرچکے ہیں۔ 15 میٹر رائفل کے مقابلے میں گگن نارنگ بھی اپنی پیشقدمی برقرار نہیں رکھ پائے ہیں۔ علاوہ ازیں ہندوستانی ہاکی ٹیم جوکہ رواں اولمپکس میں میڈل کی اُمیدوں کو برقرار رکھنے میں کامیاب ہوپائی ہے ،

اب وہ 36 برس بعد سیمی فائنل میں رسائی سے ایک قدم دور ہے اور کل اس کا مقابلہ کوارٹر فائنل میں بلجیم سے ہوگا ۔ ہندوستانی ٹیم جس نے پہلے ہی ناک آؤٹ مرحلے میں رسائی حاصل کرلی ہے ، حالانکہ گروپ مرحلے میں اس کے مقابلے غلطیوں سے بھرے ہیں ۔ ہندوستانی ہاکی ٹیم پول بی میں دو فتوحات کے بعد کوارٹر فائنل کیلئے کوالیفائی ہوپائی ہے جبکہ گروپ مرحلے میں اسے دو ناکامیاں اور ایک ڈرا بھی برداشت کرنا پڑا ہے ۔ ہندوستانی ٹیم کو آئرلینڈ کے خلاف 3-2 اور ارجنٹینا کے خلاف 2-1 کی کامیابی حاصل ہوئی ہے جبکہ اولمپکس چمپیئن جرمنی کے خلاف شاندار مظاہرہ کرنے کے باوجود اسے 1-2 کی شکست برداشت کرنی پڑی ۔ نیدرلینڈ کے خلاف بھی ٹیم 1-2 گول سے ناکام رہی ، جبکہ گروپ مرحلے کے آخری مقابلے میں کمزور حریف کینیڈا کے خلاف ہندوستانی ٹیم 2-2 سے مقابلہ ڈرا کرپائی ۔ دوسری جانب بلجیم کی ٹیم اپنے گروپ اے میں پانچ مقابلوں میں 4 فتوحات کے ذریعہ پہلے مقام پر پہونچی ہے ۔ بلجیم کو صرف ایک ناکامی نیوزی لینڈ کے خلاف ہوئی جہاں اسے 1-3 گول کی ناکامی برداشت کرنی پڑی ہے ۔ ہاکی کی عالمی درجہ بندی میں دونوں ٹیموں کے مقامات میں کوئی زیادہ فرق نہیں ہے ، جیسا کہ ہندوستان پانچویں اور بلجیم چھٹے مقام پر موجود ہے ۔

TOPPOPULARRECENT