Sunday , May 28 2017
Home / شہر کی خبریں / جائیداد ٹیکس کی عدم ادائیگی پر چوراہوں اور فلیکسیز پر نام چسپاں

جائیداد ٹیکس کی عدم ادائیگی پر چوراہوں اور فلیکسیز پر نام چسپاں

ادائیگی کے لیے نوٹس کی اجرائی کے باوجود لاپرواہی ، جی ایچ ایم سی کی نئی حکمت عملی
حیدرآباد۔  8مارچ  (سیاست نیوز)  جائیداد ٹیکس کی عدم ادائیگی کے ذمہ داروں کے نام اب چوراہوں پر نظر آئیں گے اور فلیکس و بیانرس کے خلاف مہم چلانے والی مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے 2َّّٓ زائد کے عرصہ سے جائیداد ٹیکس ادا نہ کرنے والے اداروں‘ شخصیتوں اور تجارتی مراکز کے نام فلیکس اور بیانرس پر ہوں گے۔ جی ایچ ایم سی عہدیداروں نے فیصلہ کیا ہے کہ جن لوگوں کو جائیداد ٹیکس کی ادائیگی کے لئے نوٹس جاری کی جا چکی ہیں اور وہ ٹیکس کی ادائیگی کے سلسلہ میں پس و پیش کر رہے ہیں ان کے نام ان فلیکس و بیانرس پر تحریر کرتے ہوئے شہر کے مرکزی مقامات پر لگایا جائے گا تاکہ ٹیکس نا دہندگان بدنامی سے بچنے کیلئے حکومت کو بقایاجات کی ادائیگی ممکن بنائیں۔ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے علاوہ بلدی حدود میں موجود ہزاروں ٹیکس نادہندگان کے مسئلہ سے نمٹنے کیلئے جی ایچ ایم سی نے متعدد اقدامات کئے ہیں لیکن ان اقدامات کے باوجود جائیداد ٹیکس ادا نہ کرنے والوں کے خلاف کے کاروائی کا اعلان کرتے ہوئے آبرسانی اور ڈرینج کے کنکشن منقطع کرنے کی نوٹس جاری کی تھیں لیکن اس کے باوجود بھی کوئی ردعمل ظاہر نہ کئے جانے پر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے فیصلہ کیا ہے کہ جائیداد ٹیکس کی وصولی کیلئے نادہندگان کی فہرست چوراہوں پر لگائی جائے تاکہ بڑے ٹیکس نا دہندگان کے متعلق عوام کو واقف کروایا جاسکے۔ علاوہ ازیں جائیداد ٹیکس ادا نہ کرنے والوں کی تفصیلات جی ایچ ایم سی کی جانب سے سوشل میڈیا پر بھی شئیر کرنے کے متعلق غور کیا جا رہا ہے۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق دونوں شہرو ںمیں بیانرس و فلیکس کے ذریعہ گذشتہ دو برس کے دوران جائیداد ٹیکس ادا نہ کرنے والوں کی فہرست کو سڑکوں پرآویزاں کرنے کے فیصلہ کو سرکاری منظوری حاصل ہو چکی ہے۔جی ایچ ایم سی نے سابق میں جائیداد ٹیکس وصولی کیلئے انوکھا طریقہ کار اختیار کرتے ہوئے ٹیکس نادہندگا ن کے گھروں کے سامنے کچہرے دان نصب کردیئے تھے لیکن ہائی کورٹ کی جانب سے سرزنش کے بعد انہیں ہٹا دیا گیا تھا کیونکہ یہ مسئلہ صحت عامہ سے جڑا ہوا تھا۔ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ ٹیکس نادہندگان کے خلاف کاروائی میں انہیں کوئی قانونی رکاوٹ نہیں آئے گی کیونکہ یہ بھی قرض نادہندگان کے ناموں کی طرح ان کے ناموں کا انکشاف کیا جائے گا اور توقع ہے کہ فلیکس اوربیانر س کی تنصیب کے ساتھ ہی جائیداد ٹیکس وصولی میں اضافہ ریکارڈ کیا جائے گا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT