Tuesday , October 17 2017
Home / Top Stories / جامعہ نظامیہ آڈیٹوریم کی اندرون چار ماہ تعمیر

جامعہ نظامیہ آڈیٹوریم کی اندرون چار ماہ تعمیر

اندرون ایک ماہ انیس الغرباء کا مپلکس کا سنگ بنیاد: صدر نشین وقف بورڈ

حیدرآباد ۔ 19۔ اپریل (سیاست نیوز) صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے آر اینڈ بی عہدیداروں کو ہدایت دی کہ جامعہ نظامیہ آڈیٹوریم کی تعمیر کا کام اندرون 4 ماہ مکمل کرلیا جائے۔ انہوں نے آج مولانا مفتی خلیل احمد شیخ الجامعہ جامعہ نظامیہ اور آر اینڈ بی کے عہدیداروں کے ساتھ آڈیٹوریم کی تعمیری پیشرفت کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے  آڈیٹوریم کی تعمیرکیلئے 94 لاکھ 20 ہزار 132 روپئے کا چیک مفتی خلیل احمد کو پیش کیا۔  انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اس عظیم الشان آڈیٹوریم کی جلد تعمیر کے خواہاں ہیں اور چیف منسٹر کے ہاتھوں اس کا افتتاح عمل میں آئے گا ۔ آڈیٹوریم کی تعمیر کیلئے 14 کروڑ روپئے کا تخمینہ مقرر کیا گیا ہے اور ابھی تک وقف بورڈ کی جانب سے 2 کروڑ 80 لاکھ روپئے آر اینڈ بی کو جاری کئے گئے۔ حکومت نے وقف بورڈ کی گرانٹ ان ایڈ سے رقم کی اجرائی کی سہولت فراہم کی ہے۔ تعمیری کام کی تکمیل کے ساتھ ساتھ وقف بورڈ بلز کو منظوری دے گا۔ صدرنشین وقف بورڈ نے کہا کہ وہ بہت جلد جامعہ نظامیہ کا دورہ کرتے ہوئے آڈیٹوریم کی تعمیر کا جائزہ لیں گے۔ اس موقع پر جامعہ نظامیہ کے سکریٹری سید احمد علی ، سپرنٹنڈنٹ عبید اللہ فہیم اور چیف اگزیکیٹیو آفیسر ایم اے منان موجود تھے۔  انہوں نے کہا کہ جنوبی ہند کی عظیم درسگاہ کو چیف منسٹر قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں کیونکہ عثمانیہ یونیورسٹی سے قبل یہ حیدرآباد کی واحد جامعہ تھی۔ اس جامعہ سے کئی نامور غیر مسلم قائدین بھی تعلیم حاصل کرچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے جامعہ نظامیہ کی عظمت رفتہ کی برقراری کیلئے آڈیٹوریم کی تعمیر کا فیصلہ کیا ہے ۔ صدرنشین وقف بورڈ نے بتایا کہ اندرون ایک ماہ انیس الغرباء کے کامپلکس کی تعمیر کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ 20 کروڑ روپئے سے عصری کامپلکس تعمیر ہوگا جس کی آمدنی انیس الغرباء پر خرچ کی جائے گی۔ حکومت نے انیس الغرباء سے متصل آر اینڈ بی کی اراضی کو کامپلکس کی تعمیر کیلئے حوالے کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلدیہ کی جانب سے انیس الغرباء کی جن ملگیات کا انہدام عمل میں آیا ، اس کا معاوضہ وقف بورڈ کو دیا جانا چاہئے ۔ اس سلسلہ میں وہ کمشنر جی ایچ ایم سی سے بات چیت کرچکے ہیں۔ محمد سلیم نے کہا کہ کامپلکس کی تعمیر کے بعد ملگیات اور دیگر کمرشیل سرگرمیوں کیلئے الاٹمنٹ اوپن ٹنڈر کے ذریعہ کیا جائے گا۔ اسی دوران صدرنشین وقف بورڈ نے بورڈ کے اعلیٰ عہدیداروں کا اجلاس طلب کرتے ہوئے کارکردگی بہتر بنانے کے سلسلہ میں ضروری ہدایات جاری کی ہیں ۔ انہوں نے عدالتوں میں زیر التواء مقدمات کی پیروی میں تساہل پر متعلقہ عہدیداروں کی سرزنش کی اور کہا کہ اگر عدالتی کارروائیوں کے سلسلہ میں تاخیر کی گئی تو ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ عہدیداروں کی عدم دلچسپی کے باعث عدالتوں میں اوقافی مقدمات کی یکسوئی میں تاخیر ہورہی ہے ۔ وقف بورڈ کے اسٹانڈنگ کونسلس کو بورڈ کی جانب سے مناسب مواد فراہم نہیں کیا جاتا جس کی بنیاد پر وہ مقدمہ لڑ سکیں۔ انہوں نے کہا کہ بہت جلد وہ نئے لیگل آفیسرس کے تقرر کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ انہوں نے بورڈ کے ریٹائرڈ ملازمین کو پابند کیا ہے کہ وہ اپنی بہتر کارکردگی کو یقینی بنائیں ، بصورت دیگر ان کی خدمات ختم کردی جائیں گی ۔ واضح رہے کہ وقف بورڈ کے کئی ریٹائرڈ عہدیدار اور ملازمین ابھی بھی مختلف شعبوں میں عارضی خدمات انجام دے رہے ہیں۔ صدرنشین وقف بورڈ نے چیف اگزیکیٹیو آفیسر ایم اے منان کو ہدایت دی کہ وہ کسی بھی سفارش یا دباؤ کو قبول کئے بغیر خدمات انجام دیں۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کا تحفظ اور ان کی آمدنی میں اضافہ کرنا بورڈ کا بنیادی مقصد ہونا چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT