Thursday , August 24 2017
Home / دنیا / جان ایف کینیڈی انٹرنیشنل ایرپورٹ دہشت گردی کی گرفت میں

جان ایف کینیڈی انٹرنیشنل ایرپورٹ دہشت گردی کی گرفت میں

فائرنگ کی آوازیں ، ایرپورٹ کا تخلیہ، تحقیقات کے بعد فائرنگ نہ ہونے کا انکشاف
نیویارک ۔ 15 اگست (سیاست ڈاٹ کام) جان ایف کینیڈی انٹرنیشنل ایرپورٹ پر سینکڑوں مسافروں کا آج کم از کم دو ٹرمنلس سے تخلیہ کروادیا گیا کیونکہ فائرنگ کی آوازوں کی خبر ملی تھی۔ امریکہ کے مصروف ترین ایرپورٹ پر مبینہ طور پر فائرنگ کی آوازوں سے دہشت پھیل گئی اور انتشار کا عالم تھا۔ ایرپورٹ کی اتھاریٹی جو شہر کے تمام ایرپورٹس کا انتظام کرتی ہے، کہا کہ ابتدائی اطلاعات کے بموجب پولیس کو خبر ملی کہ ٹرمنل 8 جان ایف کینیڈی انٹرنیشنل ایرپورٹ پر 9:30 بجے شب (مقامی وقت کے مطابق کل) سنائی دی۔ یہ علاقہ لوگوں کے باہر جانے کا علاقہ ہے۔ آدھا گھنٹہ بعد تقریباً مقامی وقت کے مطابق 10:15 بجے شب نیویارک کے اہم ترین ایرپورٹ کے ٹرمنل 1 کو بند کیا گیا جبکہ فائرنگ کی مزید آوازیں سنائی دیں۔ ایرپورٹ اتھاریٹی نے کہا کہ ٹرمنل کا تخلیہ کروادیا گیا۔ احتیاطی اقدام کے طور پر اس تخلیہ کے بعد نیویارک پولیس کی کثیر تعداد جان ایف کینیڈی ایرپورٹ اور لاگاڈیا ایرپورٹ پر پہنچ گئی اور تحقیقات کا آغاز کردیا۔ سینکڑوں مسافروں کا ٹرمنلس سے تخلیہ کروادیا گیا۔ کئی آنے والی اور جانے والی پروازیں منسوخ کردی گئیں اور احتیاطی اقدام کے طور پر انہیں دوسرے ایرپورٹس کی طرف موڑ دیا گیا۔ دہشت کے کئی مناظر دیکھے گئے جبکہ عہدیداروں نے حاضرین سے فوری لیٹ جانے اور بعدازاں علاقہ کا تخلیہ کردینے کی ہدایت دی۔ تاہم مکمل تلاشی کے بعد پولیس نے سب ٹھیک ہے کا اعلان کردیا اور کہا کہ فائرنگ کے بارے میں جو ہنگامی ٹیلیفون کالس وصول ہوئی تھیں، بے بنیاد تھیں۔ تمام ٹرمنلس کی تلاشی لی گئی اور ان کے ٹھیک ہونے کا اعلان کردیا گیا۔ تاہم متاثرہ ٹرمنلس پر منفی اثرات مرتب ہوئے حالانکہ معمول کی کارروائیاں جلد ہی بحال کردی گئیں۔ نیویارک پولیس کے خصوصی کارروائیوں کے شعبہ کے سربراہ ہیری ویڈن نے اپنے ٹوئیٹر پر تحریر کیا کہ کوئی گولی نہیں چلائی گئی تھی۔ قبل ازیں انہوں نے اپنے ٹوئیٹر پر کہا تھا کہ نیویارک کے پولیس عملہ اور ایرپورٹ اتھاریٹی جو نیوجرسی کے ایرپورٹ کا بھی انتظام کرتی ہے، ٹرمنل 1 اور ٹرمنل 8 جان ایف کینیڈی انٹرنیشنل ایرپورٹ کے علاقوں کے محفوظ ہونے کی اطلاع دی۔ کسی شخص پر بھی گولی نہیں چلائی گئی۔ ایسا معلوم ہوتا ہیکہ اس علاقہ میں فائرنگ بھی نہیں کی تھی۔ ابتدائی تحقیقات سے پتہ چلا کہ فائرنگ کا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔ ابتدائی تحقیقات سے اس بات کی نشاندہی نہیں ہوئی کہ جان ایف کینیڈی ایرپورٹ پر فائرنگ ہوئی ہے۔ کوئی بھی زخمی نہیں ہوا جبکہ فائرنگ کے ثبوت کے نتیجہ میں استعمال شدہ کارتوس دستیاب ہوئے ہیں۔ ایرپورٹ اتھاریٹی نے اپنے ٹوئیٹر پر اس کی اطلاع دی۔ بیان میں یہ بھی کہا گیا ہیکہ مسافرین کو اپنے اپنے ایرلائنس سے ربط پیدا کرنا چاہئے۔ فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ کیا کوئی زخمی ہوا ہے یا اس واقعہ کے بعد کوئی گرفتاری عمل میں آئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT