Tuesday , October 17 2017
Home / دنیا / جرمنی میں خواتین پر حملے، قصباتی میلے پر بوتلوں کی بارش

جرمنی میں خواتین پر حملے، قصباتی میلے پر بوتلوں کی بارش

برلن۔17 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) جرمن پولیس نے کہا کہ کئی افراد نے خواتین پر حملے کیئے اور اطلاعات کے بموجب جنسی ہراسانی کے بھی کئی واقعات پیش آئے۔ ہفتے کے دن نشے میں مدھوش نوجوانوں نے ایک چھوٹے سے قصبے کے میلے میں توڑپھوڑ مچائی اور پولیس پر خالی بوتلوں سے حملہ کیا۔ تاحال مبینہ ہراسانی کے الزام میں کسی کو گرفتار نہیں کیا گیا ہے۔ پولیس ایک مشتبہ 20 سالہ عراقی شہری کا جو ایک 17 سالہ لڑکی کو چھیڑنے میں ملوث تھا اور بعدازاں نوجوانوں کے حملے سے زخمی ہوگیا تھا اور تین افغان شہریوں کا جن کی عمریں 18 تا 20 سال ہیں اور جو جرمن میں سیاسی پناہ کی درخواست دے چکے ہیں، علاج کررہی ہے۔ پولیس سربراہ رولینڈ ای سیل نے پرزور انداز میں کہا کہ جمعہ اور ہفتے کی درمیانی رات جرمنی کے چھوٹے سے قصبے کے میلے میں جو شارنڈارف کے نام سے موسوم ہے ریاست بیڈرن کا حصہ ہے کئی خواتین کے ساتھ بدسلوکی کے مرتکب ہوئے ہیں۔ ای سیل نے کہا کہ ان کے جارحانہ تیور اور پرتشدد کارروائیوں کی ماضی میں کوئی مثال نہیں ملتی اور اس کی توقع بھی نہیں تھی۔ قصبے کی آبادی 40 ہزار ہے اور یہ اسٹیڈگارڈ کے قریب واقع ہے۔ مقامی پولیس فورس نے دیگر شہروں سے مدد طلب کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT