Saturday , August 19 2017
Home / Health / جسمانی فٹنس اور امراض سے بچنا چاہیں تو ؟

جسمانی فٹنس اور امراض سے بچنا چاہیں تو ؟

ہوسکتا ہے کہ آپ کے پاس متعدد جواز ہو جن کو بنیاد بنا کر آپ دوڑنے سے دور بھاگتے ہو مگر کیا آپ کو معلوم ہے یہ عادت صرف ایک کھیل نہیں بلکہ زندگی بدل سکتی ہے؟نہیں ناں مگر یہی حقیقت ہے اور اس کو ثابت کرنے کے لیے یہ چند وجوہات یقیناً آپ کے لئے معلومات افزا ہونے کے ساتھ حیرت انگیز بھی ثابت ہوں گی۔کیونکہ آپ کہیں بھی دوڑ سکتے ہیں۔

کینسر سے بچاؤ
امریکن نینشل کینسر انسٹیٹوٹ کے مطابق اس بات کے ٹھوس شواہد موجود ہیں کہ جسمانی طور پر متحرک افراد میں بریسٹ اور آنتوں کے کینسر کا خطرہ کم ہوتا ہے، اس کے ساتھ ساتھ یہ عادت پھیپھڑوں اور مثانے کے سرطان سے بھی تحفط دینے میں مدد   دیتی ہے۔
نئے دوست بنانا
کیا آپ اندازہ کرسکتے ہیں جب آپ اپنے پیروں کو دوڑنے کی زحمت دینا شروع کرتے ہیں تو آپ کو نئے دوست بھی ملتے ہیں، اگر آپ کسی گروپ میں دوڑنے کی کوشش کریں تو آپ بہت جلد اپنے ہم خیال افراد کے اندر ایک بہترین دوست تلاش کرہی لیں گے۔
کچھ وقت تنہا گزارنے کا موقع
اگر تو آپ دوست بنانے میں دلچسپی نہیں رکتے تو جوتوں کے تسمے کس کر دوڑنے سے آپ کو خود اپنے لئے  وقت نکالنے اور تناؤ بھرے ماحول سے کچھ دیر کی نجات کا موقع مل جائے گا۔
مقصد کا حصول
یہ بتانا مشکل ہے کہ کسی مقصد کو طے کرنا اور اسے حاصل کرنا کتنا زبردست ہوتا ہے، اگر آپ ہمیشہ سے دوڑنا چاہتے تھے چاہے اپنے گھر کے اردگرد ہی چکر لگانا چاہتے ہو تو اس مقصد کے حصول کو عادت بنالینا زندگی میں نئی خوشی کا باعث بنے گا۔
طویل زندگی
یہ بات تو طبی سائنس میں بھی ثابت ہوچکی ہے کہ دوڑنے کی عادت زندگی کی مدت میں تین سال تک کا اضافہ کردیتی ہے، یہ دعویٰ امریکہ کی آئیووا اسٹیٹ یونیورسٹی نے پندرہ سالہ تحقیق کے بعد گزشتہ مہینے یعنی جولائی میں ہی کیا، اور اس کے مطابق طویل فاصلے تک محض چند منٹ کی جوگنگ بھی زندگی کو طول دیتی ہے۔
کیلیوریز کو جلانا
کیا آپ کو معلوم ہے کہ موٹاپے میں کمی کے خواہشمند افراد کے لئے  دوڑنا سب سے بہترین طریقہ کار ہے کیونکہ یہ کیلیوریز کی بڑی مقدار کو جلاتا ہے، درحقیقت چہل قدمی کے مقابلے میں اتنے ہی فاصلے تک دوڑنا کیلیوریز کے جلنے کی مقدار میں پچاس فیصد تک اضافہ کردیتا ہے۔
مسکراہٹ
ورزش سے ہمارے دماغ میں اچھے یا خوشگوار مزاج کا سبب بننے والے کیمیکل خارج ہوتے ہیں اور دن بھر میں کچھ دیر کے لیے دوڑنا پورے دن کے لئے  چہرے پر مسکراہٹ دوڑائے رکھنے کے لئے کافی ثابت ہوسکتا ہے۔
تیز دماغ
کوئی نئی زبان سیکھنا ہی عمر بڑھنے کے ساتھ دماغ کو تیز نہیں بناتا ہے، بلکہ ایڈنبرگ یونیورسٹی کی ایک تحقیق کے مطابق جسمانی طور پر متحرک رہنا دماغی تنزلی کے خطرے کو روکنے کے لیے زیادہ موثر ہے۔
اچھی نیند
کیا آپ کو معلوم ہے کہ دن بھر میں محض دس منٹ دوڑنے والے افراد بیٹھے رہنے کے عادی لوگوں کے مقابلے میں زیادہ میٹھی نیند کے مزے لوٹتے ہیں؟ کم از کم امریکی نینشل سلیپ فاؤنڈیشن کی تحقیق میں تو یہی دعویٰ سامنے آیا ہے۔
زیادہ توانائی کا احساس
ہوسکتا ہے کہ آپ کو لگتا ہو کہ دوڑنے سے آپ دن بھر کے لئے  تھکان کا شکار ہوجائیں گے مگر جارجیا یونیورسٹی کی ایک تحقیق کے مطابق جسمانی سرگرمیاں آپ کو جسمانی طور پر زیادہ توانائی کا حامل    بنادیتی ہیں۔
دل کی بہتر صحت
امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن نے امراض قلب سے تحفظ کے لئے  چالیس منٹ کی معتدل سرگرمیوں کی سفارش کررکھی ہے، اگر ہفتے میں تین سے چار بار آپ دوڑنے کو عادت بنالیں تو اس سے بلڈ پریشر اور کولیسٹرول کو قدرتی طور پر کم رکھ کر خود کو دل کے موذی مرض سے بچاسکتے ہیں۔
سکون کا احساس
دوڑنے سے دماغ میں خارج ہونے والے کیمیکل کے باعث آپ کو شدید ذہنی تناؤ سے بھی نجات ملتی ہے اور سکون محسوس ہونے لگتا ہے۔
باہر وقت گزارنے کا موقع
قدرت کے ساتھ کچھ اضافی وقت گزارنا آپ کو خوش باش، توانائی سے بھرپور اور پرسکون بناتا ہے۔
نئے مقامات دیکھنے کا موقع
دوڑنے کی عادت کی بدولت آپ کو اپنے ہی علاقے یا شہر کے نئے گوشے دیکھنے کا موقع ملتا ہے۔
ہڈیوں کا تحفظ
ورزش جیسے دوڑنا مضبوط اور صحت مند ہڈیوں کی کنجی ثابت ہوتا ہے اور یہ عادت جوڑوں کے مرض سے بھی بچانے میں مددگار ثابت ہوتی ہے۔
سلسلہ سپلیمنٹ صفحہ اول سے …
نزلہ زکام سے بچاؤ
کیا آپ کو معلوم ہے کہ ٹھنڈی ہوا میں دوڑنا آپ کو فلو جیسے تکلیف دہ مرض سے بچاتا ہے؟ ایک امریکی تحقیق کے مطابق معتدل مقدار میں ورزش جسمانی دفاعی نظام کو مضبوط بناتی ہے جس سے فلو کا سبب بننے والے وائرس سے تحفظ میں مدد ملتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT