Sunday , August 20 2017
Home / جرائم و حادثات / جسم فروشی کا بین ریاستی نٹ ورک بے نقاب

جسم فروشی کا بین ریاستی نٹ ورک بے نقاب

اسپیشل آپریشن ٹیم کا بنگلور اور ممبئی پولیس کیساتھ کئی مقامات پر دھاوے
حیدرآباد ۔12 اگست (سیاست نیوز) بیرون ریاستوں سے سڑکوں کو شہر منتقل کرتے ہوئے جسم فروشی کا کاروبار کرنے والے ایک بین ریاستی نٹ ورک کو پولیس نے بے نقاب کردیا۔ مادھاپور اسپیشل آپریشن ٹیم نے بنگلور اور ممبئی کی پولیس سے تال میل کرتے ہوئے اس ریاکٹ کا پردہ فاش کیا اور 7 افراد بشمول ایک خاتون کو گرفتار کرلیا۔ بتایا جاتا ہیکہ خاتون شوہر کے ہمراہ لڑکیوں کو سربراہ کرنے کے کام میں مصروف تھی۔ تاہم پولیس کی گرفت سے اصل سرغنہ ابھی مفرور ہے۔ بتایا جاتا ہیکہ 34 راجیش پروال اور اس کی بیوی 28 سالہ ارتھی پروال ساکنان ممبئی کے علاوہ پولیس نے خاتون افسر ساکن مادھاپور، 35 سالہ اجے کمار چودھری ساکن ممبئی 36 سالہ گرو سنجے شٹی ساکن کونڈا پور 38 سالہ سروان ریڈی ساکن یوسف گوڑہ اور 31 سالہ کرن ریڈی ساکن یوسف گوڑہ کو گرفتار کرلیا اور بنگلور کے علاوہ شہر کے مختلف مقامات اور ہوٹلوں پر دھاوا کرتے ہوئے 4 لڑکیوں کو ان کے چنگل سے آزاد کروالیا جن کی عمر 21 تا 26 سال بتائی گئی ہے اور اصل سرغنہ سنجے جو کولکتہ کا ساکن بتایا گیا ہے، پولیس کی گرفت سے باہر ہے۔ سنجے ان سب ایجنٹس کو کم عمر لڑکیاں فراہم کرتا تھا جو ان کی معاشی حالت کو دیکھتے ہوئے اپنی زائد رقم اور بہترین مواقع کی آس بتاکر جسم فروشی کرواتا تھا۔ لڑکیوں کو حاصل کرنے کے بعد یہ لوگ انہیں اسٹار ہوٹلس اور بڑے ہوٹلوں میں گراہکوں سے رجوع کرتے تھے۔ اس انسانی سوداگری کے ریاکٹ کو بے نقاب کرنے کے بعد پولیس اس طرح کے معاملوں کی جانچ میں جٹ گئی ہے اور مادھاپور ایس او ٹی نے ایک خفیہ اطلاع پر کارروائی کا منصوبہ تیار کرتے ہوئے بنگلور اور ممبئی کی پولیس سے رابطہ قائم کیا اور اطلاعات کے تبادلہ کے بعد مؤثرانداز میں کارروائی کی گئی۔ مادھاپور ایس او ٹی نے شہر کے گاندھی نگر پولیس کے اشتراک سے بھی کئی ایک کو گرفتار کیا جو ٹینک بینڈ کے قریب ایک اسٹار ہوٹل سے متصل ہوٹل سے خاطی پکڑے گئے۔ مادھاوپور ایس او ٹی کے مطابق گٹلہ بیگم پیٹ بنگلور اور گاندھی نگر میں گرفتاریوں کے بعد اس ریاکٹ کو بے نقاب کیا گیا اور اس طرح کی مزید کارروائیوں کا امکان جتایا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT