Saturday , April 29 2017
Home / ہندوستان / جسٹس کرنن کے رویہ سے جیٹھ ملانی نالاں

جسٹس کرنن کے رویہ سے جیٹھ ملانی نالاں

نئی دہلی 13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) سینئر وکیل رام جیٹھ ملانی نے کلکتہ ہائیکورٹ کے جسٹس سی ایس کرنن پر شدید تنقید کی کہ انھوں نے عدلیہ کے خلاف ریمارکس کئے ہیں، اور اُنھیں مشورہ دیا کہ اپنے ہر اُس لفظ سے دستبردار ہوجائیں جو اُنھوں نے کہا ہے۔ جسٹس کرنن کے خلاف تحقیر عدالت کے کیس میں سپریم کورٹ نے اپنے روبرو 31 مارچ کو اُن کی حاضری یقینی بنانے کے لئے قابل ضمانت وارنٹ جاری کئے ہیں۔ اُنھیں کھلے مکتوب میں جیٹھ ملانی نے کہاکہ کرپشن کے غلبہ والے اِس ملک میں ہمارا عدلیہ ہی اِس سے محفوظ واحد شعبہ ہے۔ اِسے تباہ یا کمزور نہ کریں۔ جسٹس کرنن نے سرکشی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ 31 مارچ کو تحقیر عدالت کی کارروائی میں شریک نہیں ہوں گے اور قابل ضمانت وارنٹ کی اجرائی کو ’’غیر دستوری‘‘ قرار دیتے ہوئے الزام عائد کیا تھا کہ اُنھیں دلت ہونے پر نشانہ بنایا جارہا ہے۔ جسٹس کرنن کے استدلال کو خارج کرتے ہوئے جیٹھ ملانی نے کہاکہ ایک وکیل کی حیثیت سے میں نے میری پوری زندگی پسماندہ طبقات کے لئے کام کیا ہے اور مجھے اُن کے ساتھ پوری ہمدردی ہے لیکن آپ اس طرح کے عمل سے خود اپنے مفادات کو عظیم ترین نقصان پہنچا رہے ہو۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT