Friday , March 24 2017
Home / شہر کی خبریں / جعلی دستاویزات سے اراضیات کی فروخت6 رکنی ٹولی بے نقاب

جعلی دستاویزات سے اراضیات کی فروخت6 رکنی ٹولی بے نقاب

حیدرآباد /21 فروری ( سیاست نیوز ) حیات نگر پولیس نے اراضی فروخت کے ایک بڑے اسکام کو بے نقاب کردیا اور 6 افراد کی ٹولی کو گرفتار کرلیا ۔ جو جعلی دستاویزات کے ذریعہ ایک پلاٹ کو کئی افراد کے نام پر فروخت کر رہے تھے ۔ جنوری میں ملی ایک شکایت پر اقدامات کرتے ہوئے حیات نگر پولیس نے سنسنی خیز انکشاف کئے 6 تا 7 لاکھ روپئے مالیتی اراضی کو ایک سے زائد افراد کے نام فروخت اور قرض حاصل کرتے ہوئے اس ٹولی نے 14 تا 15 کروڑ روپئے کا اسکام کیا ۔ پولیس کمشنر راچہ کنڈہ مسٹر مہیش مرلی دھر بھگوت نے حیات نگر پولیس ڈی سی پی ایل بی نگر مسٹر تفسیر اقبال کے اقدامات کی ستائش کی ہے ۔ انہوں نے ایک پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ 62 سالہ راگھویندر راؤ ساکن گڈی انارام 53 سالہ بی سائیلو ساکن مشیرآباد 58 سالہ دیولاپلی چندرا پرکاش راؤ ساکن صاحب نگر کلدی 49 کے شیام ساکن چلکل گوڑہ سکندرآباد 53 سالہ ڈی کرشنا ساکن چلکل گوڑہ سکندرآباد اور 55 سالہ جلگم بکشاپتی ساکن چلکل گوڑہ کو گرفتار کرلیا ۔ حیات نگر پولیس نے انکے قبضہ سے 37 اصل دستاویزات سیل ڈیڈ 83 نان جوڈیشیل اسٹامپ پیپر بانڈز ، آئی ڈی کارڈ فرضی ووٹر آئی ڈی کارڈز کو ضبط کرلیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ اس ٹولی نے اراضی کا معاہدہ کرنے کے بعد زمین کے مالک کو یقین دلایا اور اپنے جال میں پھانسنے کے بعد اراضی کو پلاٹس کی شکل دی اور ان پلاٹس کو ضلع رنگاریڈی کے مختلف سرکاری محکموں سے وابستہ ملازمین میں فروخت کرنے کی کوشش کی اور اور انہیں اس بات کا یقین دلایا گیا کہ اس اراضی پر بنک کے ذریعہ لون کی سہولت بھی فراہم کی جارہی ہے ۔ اس طرح چند افرادکو پلاٹس تقسیم کرنے کے بعد اس ٹولی نے فرضی دستاویزات کے ذریعہ کل 12 ایکڑ 25 گنٹہ اراضی جو سروے نمبر 950 کوہڈا ویلیج میں واقع ہے کا ایک اور شخص سے معاہدہ کردیا ۔ جو اسی ٹولی کا ایک رکن بتایا گیا ہے ۔ اس کے بعد اس ٹولی نے منصوبہ بند طریقہ سے جعلسازی کرتے ہوئے ان پلاٹس سے کل 88 پلاٹس دوبارہ فروخت کردئے اور فرضی رپورٹس کے ذریعہ قرض بھی حاصل کرلیا ۔ پولیس حیات نگر نے ایک اسپیشل ٹیم کو تشکیل دیکر اس ٹولی کو بے نقاب کیا ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT