Monday , August 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / جمعیت علماء ہند شاخ عادل آباد کی تشکیل جدید

جمعیت علماء ہند شاخ عادل آباد کی تشکیل جدید

عادل آباد ۔ 27مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) جمعیت علماء ہند شاخ عادل آباد کی جدید تشکیل کردہ کمیٹی کو فرضی کمیٹی قرار دیتے ہوئے مستقر عادل آباد کے بیشتر علماؤں نے جہاں ایک طرف اپنی ناراضگی کا اظہار کیا وہیں دوسری طرف مقامی علماؤں کی کثیر تعداد پر مشتمل ایک اور ریاستی صدر حافظ پیر شبیر سے حیدرآباد پہنچ کر ملاقات کرتے ہوئے حقیقت سے واقف کرانے کی بات کہی ۔ مستقر کے علماء جن کی تعداد کم و بیش 100ہے ۔ انہوں نے صدر کمیٹی کے قیام پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کمیٹی کا انعقاد ایک کمرے میں جو کمیٹی کے معتمد ہیں ان کے رہائش گاہ پر چند نصف درجن حفاظ جو ان کے ہم خیال ہیں ان کی موجودگی میں عمل میں لایا گیا جبکہ کمیٹی کے قیم کی اطلاع دیگر کسی علماء کو نہیں دی گئی ۔ چند ماہ قبل جو اجلاس منعقد ہوا تھا اس موقع پر مستقر کے تمام علماء کو اطلاع دی گئی تھی ۔ چند ناگزیر وجوہات کے پیش نظر کمیٹی کا قیام ایک ماہ بعد عمل میں لانے سے اتفاق کیا گیا تھا ۔ مختلف علماء نے منتخب صدر پر اپنے عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ صدر موصوف تقریباً 8سال سے عادل آباد سے ترک تعلق کرتے ہوئے حیدرآباد میں قیام کئے ہوئے ہیں جس کے بناء مقامی علماء کے مسائل کو حل کرنے میں کافی دشواریاں ہورہی ہیں ۔ مستقل طور پر مقامی ذمہ دار کو جمعیت کی قیادت کرنے پر زور دیا اور حالیہ وزیر دو سالہ میعاد کے منتخبہ صدر کو بار باع عہدے پر فائز رہنے کا الزام عائد کیا ۔ ایسے علماء جو کمیٹی قیام کے دوران اجلاس میں شریک نہیں تھے ان علماء کے نام بھی کمیٹی میں شامل کرنے کا الزام عائد کیا ۔ حالیہ کمیٹی کے قیام کی اطلاع عادل آباد کے علماؤں میں شدید ناراضگی پائی جارہی ہے ۔ مقامی جمعیت علماء کمیٹی کی جدید تشکیل کیلئے مختلف علماء سرگرم ہوچکے ہیں ۔ مستقر پر حیدرآباد ریاستی جمعیت صدر سے ملاقات کے بعد مقامی کمیٹی تشکیل دینے پر غور و خوص کررہے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT