Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / جموں و کشمیر ‘ شام اور عراق کے درمیان نٹ پر بات چیت

جموں و کشمیر ‘ شام اور عراق کے درمیان نٹ پر بات چیت

صیانتی راڈار پر دستیاب ‘ ڈپٹی کمشنرس کو 34 چینلس کے خلاف کارروائی کی ہدایت ‘ حکومت کی سرینگر منتقلی

سرینگر ۔ 7مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) صیانتی محکمے ممنوعہ تنظیم دولت اسلامیہ کے وادی کشمیر میں اپنے اڈے کے قیام کے امکانات کو مسترد نہیں کررہے ہیں کیونکہ انہیں انٹرنیٹ پر بات چیت کے ذریعہ شام اور عراق کے ساتھ گذشتہ 6ماہ سے وادی کشمیر کے چند نوجوانوں کی بات چیت کا صیانتی راڈار کے ذریعہ پتہ چلاہے ۔ صیانتی انتظامیہ کے عہدیدار نے کہا کہ وادی کے چند علاقے ایسے ہیں جہاں سے چند نوجوان ایک یا زیادہ افراد سے شام اور عراق میں ربط قائم کئے ہوئے ہیں ۔ گذشتہ ماہ دو نقاب پوش بندوق بردار حزب المجاہدین کے دہشت گرد کی خبر واقع پھلواما پر مجمع میں اس وقت شامل تھے جب کہ طالبان اور دولت اسلامیہ کے قواعد کا تعین کیا جارہا تھا اور پاکستان کی تائید میں نعرہ بازی کی جارہی تھی ۔ انہوں نے تین منٹ تک شعلہ بیان تقریریں کیں ۔ دنیا بھر میں اسلام کی توسیع اور اشاعت اور بحیثیت قانون شریعت کی اہمیت کے موضوع پر ان افراد نے تقریریں کیں ۔ عسکریت پسند تنظیموں بشمول متحدہ جہاد کونسل جو دہشت گرد تنظیموں کا ایک وفاق ہے اور پاکستانی مقبوضہ کشمیر میںو اقع ہے ۔ علاوہ ازیں حزب المجاہدین کی مقامی شاخ نے فوری طور پر اس واقعہ کی اہمیت کم کرتے ہوئے کہا کہ صیانتی عہدیداروں نے اس واقعہ کو ضرورت سے زیادہ سنگین بنادیا ہے ۔ صیانتی محکموں کا احساس ہے کہ اگر دولت اسلامیہ کے بڑھتے ہوئے اثر و رسوخ پر قابو نہ پایا جائے تو یہ وادی کشمیر کی صورتحال کو مزید ابتر کردے گا ۔ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ وادی کشمیر سے چند کارکنوں نے شام اور عراق میں موجود افراد سے بات چیت کی تھی جس کا گذشتہ ایک سال ریکارڈ حاصل کرلیا گیا ہے ۔ 2014 ‘ 2015 اور 2016کے اوائل میں یکادکا واقعات دیکھے گئے تھے لیکن جاریہ سال کے آغاز میں جامع نگرانکار نظام قائم کیا گیا تاکہ بات چیت کی تفصیلات حاصل کی جاسکیں ۔ 100سے زیادہ افراد کو بیرونی ممالک میں اپنے آقاؤں سے بات چیت کرتے ہوئے دریافت کئے گئے ۔ جنوبی کشمیر کے بعض دیہاتوں ‘ شمالی کشمیر کے ضلع سوپور ‘ ریاسی کشٹوار اور دوڈا ( جموں علاقہ ) اور پرنگ اور لار ( وسطی کشمیر) کے علاقوں سے بات چیت ہونے کا پتہ چلا ۔ پوری وادی کشمیر میں حالیہ احتجاجی مظاہروں کے درمیان بعض علاقوں میں دولت اسلامیہ کے پرچم لہرائے گئے ۔ ممنوعہ دہشت گرد تنظیم کی تائید میں نعرہ بازی کی گئی ۔ فوج کو دولت اسلامیہ کے نظریات کے وادی کشمیر کے نوجوانوں نے دن بہ دن زیادہ مقبول ہونے پر سخت فکر پیدا ہوگئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT