Saturday , September 23 2017
Home / Top Stories / جموں و کشمیر میں نائب صدر کانگریس راہول گاندھی کا تین روزہ دورہ

جموں و کشمیر میں نائب صدر کانگریس راہول گاندھی کا تین روزہ دورہ

سرحدی علاقوںمیں پاکستانی فائرنگ اور شلباری کے متاثرین سے ملاقات

بالکوٹ ۔ 26 ۔ اگست (سیاست ڈاٹ کام) نائب صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج ضلع پونچھ میں حقیقی خط قبضہ (LOC) سے متصل علاقوں میں پاکستانی فائرنگ اور شلباری سے متاثرہ خاندانوں سے ملاقات کی اور کہا کہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ متاثرین کے مطالبات بشمول بازآبادکاری اور معاوضہ کی ادائیگی اور انشورنس کا احاطہ قبول کرلیا جائے ۔ کانگریس لیڈر نے آج سے جموں و کشمیر کا تین روزہ دورہ شروع کیا ہے ۔ جشن آزادی کے دن علاقہ بالکوٹ میں جنگ بندی کی خلاف ورزی کرتے ہ وئے پاکستان کی فائرنگ میں ہلاک 6 شہریوں بشمول ایک سرپنچ اور ایک ٹیچر کے سوگوار خاندانوں سے ملاقات کر کے پرسہ دیا ۔ ایک مہلوک امین کے بھائی عظیم سے بات چیت کرتے ہوئے راہول گاندھی نے کہا کہ میں آپ لوگوں کے دکھ درد میں برابر کا شریک ہوں اور اپنوں کی جدائی کا غم کیا ہوتا ہے ، وہ بخوبی واقف ہیں۔ انہوں نے ایک اور زخمی رمضان سے بھی ملاقات کی ۔ نائب صدر کانگریس نے پارٹی لیڈر امبیکا سونی ، صدرجموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی غلام احمد میر کے ہمراہ 52 سالہ سرپنچ کرامت حسین کے افراد خاندان سے بھی بات چیت کی جو کہ پاکستانی فائرنگ میں جاں بحق ہوگئے اور انہیںممکنہ امداد کا تیقن دیا۔ پاکستانی فائرنگ اور شلباری کی زد میں آنے والے دیہاتیوں کا مطالبہ ہے کہ انہیں محفوظ علاقوں میں منتقل کیاجائے اور جان و مال بشمول فصل اور مویشیوں کا انشورنس کروایا جائے ۔

اس موقع پر راہول گاندھی نے بتایا کہ یہاں کے عوام انتہائی فکرمند اور خوفزدہ ہیں اور ان کے مطالبات جائز اور منصفانہ ہے۔ مرکزی حکومت کوچاہئے کہ توجہ دیتے ہوئے کوئی قدم اٹھائے۔ کانگریس لیڈر جو کہ علاقہ کشمیر اور لداخ کا بھی دورہ کرنے والے ہیں، بتایا کہ متاثرہ دیہاتیوںکی یہ شکایت ہے کہ جب کوئی دہشت گردانہ حملہ میں مارا جاتاہے تو لواحقین کو معقول معاوضہ دیاجاتا ہے لیکن پاکستانی فائرنگ میں ہلاک ہونے پر بہت ہی کم معاوضہ ادا کیا جاتا ہے جو کہ سراسر ناانصافی ہے اور دونوں معاملوں میں معاوضہ کو یکساں کردیا جائے۔ ایک دیہاتی غلام عباس نے راہول گاندھی سے کہا کہ ہمیں پاکستان سالہا سال سے نشانہ بنارہا ہے ۔ ہم چاہتے ہیں کہ فائرنگ میں ہلاکت پر سوگوار خاندان میں کسی ایک کو ملازمت کی فراہمی اور محفوظ مقامات پر بازآبادکاری کی جائے ۔ کانگریس لیڈر نے بتایا کہ عوام کا یہ مطالبہ ہے کہ سرحد پار سے فائرنگ کے دوران انہیں حفاظت کو یقینی بنانے کیلئے بنکرس تعمیر کئے جائیں اور ان کا بیمہ کروایا جائے ۔ ہندوستانی دستوں کی جوابی فائرنگ کے سوال پر انہوں نے کہاکہ یہ فوج کا کام ہے ۔ میں یہاں صرف ان لوگوں سے ملاقات کیلئے آیا ہوں جو کہ سرحدوں کی نگہبانی کیلئے جانبازی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ لہذا حکومت بھی ان کے مفادات کا تحفظ کرے جبکہ ان کے مطالبہ کی بہ آسانی پذیرائی کی جاسکتی ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT