Saturday , October 21 2017
Home / ہندوستان / جموں و کشمیر کے محکمہ تعلیمات میں مالیاتی دھاندلیاں 6 عہدیداروں اور ایک خانگی کنٹراکٹر کے خلاف کیس درج

جموں و کشمیر کے محکمہ تعلیمات میں مالیاتی دھاندلیاں 6 عہدیداروں اور ایک خانگی کنٹراکٹر کے خلاف کیس درج

سرینگر ۔ یکم ۔ اکٹوبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : اسٹیٹ ویجلنس آرگنائزیشن نے 11 افراد بشمول جموں و کشمیر بورڈ آف اسکول ایجوکیشن کے 6 برسر خدمت اور سابق عہدیداروں کے خلاف ایک کیس درج کرلیا ہے جنہوں نے سال 2012 میں محکمہ تعلیمات میں مالیاتی بے قاعدگیوں کا ارتکاب کیا تھا ۔ ایس وی او کے ترجمان نے آج بتایا کہ 6 عہدیداروں اور ایک کنٹراکٹر کے خلاف قانون انسداد رشوت ستانی کے تحت کل ایف آر آئی درج کرلیا گیا ہے ۔ جس میں اس وقت کے صدر نشین شیخ بشیر احمد ، ڈپٹی سکریٹری حنیف ، جوائنٹ سکریٹری روف احمد ، ہیڈ اسسٹنٹ منظور احمد ، سیکشن آفیسر ستنارم سنگھ اور سینئیر اسسٹنٹ بورڈ آف اسکول ایجوکیشن اور ایک خانگی کنٹراکٹر فاروق احمد کے نام شامل کئے گئے ہیں ۔ ترجمان نے بتایا کہ اسٹیٹ ویجلنس آرگنائزیشن کی ابتدائی تحقیقات میں پتہ چلا ہے کہ بورڈ کے عہدیداروں نے مختلف گاڑیوں کے ذریعہ اہم اشیاء کی تقسیم کے لیے بھاری رقومات بینک سے نکال لی تھیں ۔ کنٹراکٹر کے بلز میں جن گاڑیوں کا تذکرہ کیا گیا اس کا وجود نہیں ہے اور جب کہ ان گاڑیوں کے ذریعہ امتحانات پرچہ سوالات اور دیگر میٹریل سربراہ کیا گیا تھا ۔ آر ٹی اے حکام کی جانب سے تحقیقات پر پتہ چلا کہ جن گاڑیوں کے نمبرات پیش کئے گئے وہ آٹو رکشا ، اسکوٹر ، منی بس اور کاروں کے ہیں ۔ اور فرضی گاڑیوں کی ادائیگی بھی ووچر کے ذریعہ کی عمل میں آئی ہے جس پر مذکورہ عہدیداروں کے خلاف کیس درج کرلیا گیا ہے تاہم کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT