Friday , July 28 2017
Home / کھیل کی خبریں / جنوبی افریقہ ’’چوکرز‘‘ کی تاریخ بدلنے میں پھر ناکام

جنوبی افریقہ ’’چوکرز‘‘ کی تاریخ بدلنے میں پھر ناکام

اوول ۔12 جون (سیاست ڈاٹ کام )دنیائے کرکٹ میں چوکرز کے نام سے مشہور جنوبی افریقی ٹیم چیمپئنز ٹرافی میں پھر چْوک گئی جیسا کہ اسے ہندوستان کے خلاف ایک اہم مقابلے میں شکست ہوئی ہے۔ 1992ء ورلڈ کپ کے سیمی فائنل سے شروع ہونے والاافریقہ کی ناکامیوں کا سفر تھم نہ سکا۔آئی سی سی ایونٹس کے اہم میچز میں شکست کھانے والی جنوبی افریقی ٹیم کا شکست سے چولی دامن کا ساتھ ہے۔ چیمپئنز ٹرافی کے ناک آوٹ مقابلے میں اسے ہندوستان کے خلاف آٹھ وکٹوں سے شکست ہوئی۔ ریکارڈ پر نظر دوڑائی جائے تو جنوبی افریقی ٹیم ورلڈ کپ 1992ء کے سیمی فائنل میں ناکام رہی جبکہ بارش بھی چوکرز کی دشمن بنی۔ اس کے بعد عالمی کپ 1996ء کے کوارٹرز فائنل میں ویسٹ انڈیز نے افریقی کو چت کیا۔ 1999ء کے سیمی فائنل میں لانس کلوزنر کی جلد بازی جنوبی افریقی ٹیم کو لے ڈوبی۔ ورلڈ کپ 2003ء کے سوپر سکس مرحلے میں سری لنکا نے افریقی کو شکست دی۔ میچ ٹائی ہوا تو بارش نے بھی کام دکھایا۔ عالمی کپ 2007ء کے سیمی فائنل میں گرائم سمتھ کی ٹیم کو آسٹریلیا نے شکست دی۔ اس کے بعد 2015ء کے عالمی مقابلوں میں افریقہ کا سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ سے مقابلہ ہوا تو چوکرز یہاں بھی نیوزی لینڈ کے خلاف کامیاب نہ ہوسکے۔

 

TOPPOPULARRECENT