Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / جنوبی آفریقہ میں گاندھی جی کے ٹرین سفر کی یادیں تازہ

جنوبی آفریقہ میں گاندھی جی کے ٹرین سفر کی یادیں تازہ

پیٹر مارٹز برگ ۔ /9 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے تاریخ کو زندہ کرتے ہوئے جنوبی افریقہ میں ٹرین کے ذریعہ مہاتما گاندھی کے اس سفر کی یادوں پر عملاً تقلید کرتے ہوئے جنوبی افریقہ میں آج اس ریلوے اسٹیشن تک ٹرین کے ذریعہ سفر کیا جہاں گاندھی جی کو ٹرین کے کمپارٹمنٹ کے باہر پھینک دیا گیا تھا اور یہی وہ واقعہ تھا جو ان (گاندھی جی) کی زندگی کا رخ موڑنے کا موجب بن گیا تھا ۔ مودی نے جنوبی افریقہ میں اپنے دورہ کے دوسرے دن پنٹ رچ سے ٹرین میں سوار ہوکر 15 کیلو میٹر کے فاصلہ پر واقع پیٹر مارٹز برگ پہونچے اور نسلی امتیاز کے خلاف مہاتما گاندھی کی جدوجہد کو خراج عقیدت ادا کیا ۔ ایک یادگار تاریخی واقعہ کے مطابق مہاتما گاندھی /7 جون 1893 ء کو ڈربن سے پریٹوریا روانہ ہورہے تھے کہ ایک سفید فام شخص نے ٹرین کے فرسٹ کلاس کمپارٹمنٹ میں ان کی موجودگی پر اعتراض کرتے ہوئے انہیں تھرڈ کلاس کمپارٹمنٹ میں چلے جانے کا حکم دیا تھا ۔ گاندھی جی کے پاس چونکہ فرسٹ کلاس کا ٹکٹ تھا چنانچہ انہوں نے سفید فام نسل پرست شخص کا حکم قبول کرنے سے انکار کردیا تھا جس پر اس شخص نے موسم سرما کی رات انہیں (گاندھی جی) کو پیٹر مارٹز برگ اسٹیشن پر فرسٹ کلاس کمپارٹمنٹ سے اٹھاکر باہر پھینک دیا تھا اور پھر گاندھی جی ٹھٹھہرا دینے والی سردی کے دوران رات بھر کانپتے ہوئے بیٹھے رہے ۔
اس واقعہ نے جنوبی افریقہ میں ہی مقیم رہتے ہوئے ہندوستانیوں کے تیئں سفید فام افراد کی نسل پرستی اور امتیازی سلوک کے خلاف جدوجہد کرنے کے فیصلہ میں اہم رول ادا کیا تھا ۔ مودی نے اس مقام کا دورہ بھی کیا جہاں گاندھی کو ٹرین سے باہر پھینکا گیا تھا ۔ نریندر مودی نینکس کا دورہ بھی کریں گے ۔ اس علاقہ سے گاندھی کی قریبی وابستگی رہی ہے ۔ وزیراعظم نے گزشتہ روز جنوبی افریقہ کے صدر جیکب زوما سے بات چیت کے بعد گاندھی جی اور نیلسن منڈیلا کو پراثر خراج عقیدت ادا کیا ۔

TOPPOPULARRECENT