Tuesday , October 17 2017
Home / دنیا / جنوبی بحیرہ چین میں تیرتے ہوئے نیوکلیر توانائی پلانٹس کا منصوبہ

جنوبی بحیرہ چین میں تیرتے ہوئے نیوکلیر توانائی پلانٹس کا منصوبہ

بیجنگ ۔ 14 ۔ فروری : ( سیاست ڈاٹ کام ) : چین نے حال ہی میں ایک ایسا بیان دیا ہے جس نے یقینا کئی ممالک کو چونکا دیا ہوگا کیوں کہ چین اب ترجیحی طور پر جنوبی بحیرہ چین میں تیرتا ہوا نیوکلیر توانائی پلانٹس تعمیر کرنے کا خواہاں ہے ۔ جس کی سب سے اہم وجہ یہ بتائی جارہی ہے کہ چین اس متنازعہ جزیرہ میں برقی سربراہی کے نظام کو بہتر بنانا چاہتا ہے ۔ ریاستی انتظامیہ برائے سائنس ، ٹکنالوجی و صنعت برائے قومی دفاع کے نائب ڈائرکٹر وانگ یرن نے بتایا کہ چین اب تیرتے ہوئے نیوکلیر توانائی پلانٹ کی تعمیر کو اولین ترجیح دے گا اور توقع ہے کہ آئندہ پانچ سالوں کے دوران ہی اس پر عمل آوری ہوجائے تاکہ آف شور پراجکٹس توانائی کی اطمینان بخش سربراہی کو یقینی بنایا جاسکے اور سمندری گیس کے استحصال کو روکا جائے ، انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں چینی حکام نے متعلقہ ٹکنالوجیز پر اپنی تحقیق شروع کردی ہے ۔ یاد رہے کہ مجوزہ نیوکلیر توانائی پلانٹس ملک کے پنچسالہ ترقیاتی منصوبہ کا اہم حصہ ہے جس کا سلسلہ 2020 تک جاری رہے گا ۔ سرکاری اخبار پیوپلز ، ڈیلی نے اپنی آن لائن رپورٹ میں یہ بات بتائی ۔۔

TOPPOPULARRECENT