Sunday , April 23 2017
Home / ہندوستان / جنوبی کشمیر کے پلوامہ میں مسلح تصادم ختم

جنوبی کشمیر کے پلوامہ میں مسلح تصادم ختم

2 دہشت گرد اور ایک 16 سالہ طالب علم ہلاک
سری نگر ، 9 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں جمعرات کو ہونے والے ایک مسلح تصادم اور تصادم کے مقام پر مقامی لوگوں اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والی جھڑپوں میں لشکر طیبہ سے وابستہ 2 دہشت گرد اور ایک 16 سالہ کمسن طالب علم جاں بحق ہوا ہے ۔مسلح تصادم والے علاقہ ‘پدگام پورہ’ اور اس سے ملحقہ علاقوں میں صورتحال انتہائی کشیدہ بنی ہوئی ہے اور احتجاجی مظاہرین و سیکورٹی فورسز کے مابین جھڑپوں کو روکنے کے لئے پورے ضلع پلوامہ میں سیکورٹی فورسز کی اضافی نفری تعینات کی گئی ہے ۔ انتظامیہ نے احتیاطی اقدامات کے طور پر وسطی کشمیر کے بڈگام اور جموں خطہ کے بانہال کے درمیان چلنے والی ریل سروس معطل کردی ہے ۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ مسلح تصادم آرائی کے مقام پر احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کی مابین ہونے والی جھڑپوں میں بیگم باغ کاکہ پورہ کا رہنے والا 16 سالہ طالب عامر نذیر وانی ولد نذیر احمد وانی سینے میں گولی لگنے سے جاں بحق ہوا۔جھڑپوں میں متعدد دیگر عام شہریوں کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والے مسلح تصادم کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا ‘پدگام پورہ اونتی پورہ میں جنگجوؤں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر سیکورٹی فورسز اور جموں وکشمیر پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ (ایس او جی) نے گذشتہ رات مذکورہ گاؤں میں مشترکہ تلاشی آپریشن شروع کیا’۔تاہم جب سیکورٹی فورسزمذکورہ گاؤں میں ایک مخصوص جگہ کی جانب پیش قدمی کررہے تھے تو وہاں موجود
جنگجوؤں نے ان پر خودکار ہتھیاروں سے اندھا دھند فائرنگ کی۔ انہوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے جوابی فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے مابین باضابطہ طور پر جھڑپ کا آغاز ہوا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT