Thursday , October 19 2017
Home / Top Stories / جنوبی کیرولینا میں ٹرمپ اور نیواڈا میں ہلاری کی کامیابی

جنوبی کیرولینا میں ٹرمپ اور نیواڈا میں ہلاری کی کامیابی

کولمبیا۔21فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ کے صدر کے عہدہ کیلئے مسابقت میں شدت پیدا ہوتی جارہی ہے ۔ ری پبلکن پارٹی کے صف اول کے امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ نے جنوبی کیرولینا میں پرائمری کے دوران اپنے تمام فریقوں کو شکست دے دی جب کہ ڈیموکریٹک پارٹی کی صف اول کی صدارتی امیدوار ہلاری کلنٹن نے نیوڈا میں اپنی شاندار انتخابی مہم کے ذریعہ کامیابی حاصل کرلی ۔ ٹرمپ کی کامیابی جاریہ ماہ کے اوئل میں نیوامپشائر میں ان کی کامیابی کاتسلسل ہے ۔ آئیوا میں اُن کے حامیوں کو دوسرا مقام حاصل ہوا تھا ۔ نیوڈا میں ری پبلکن پارٹی میںان کے حامی ان کی انتخابی مہم چلانے سے قاصر رہے ۔ اس ریاست میں دیگر 13ریاستوں کے ساتھ یکم مارچ منگل کے دن رائے دہی مقرر ہے ۔ عملی اعتبار سے صدر امریکہ کے عہدہ کیلئے اب صرف پانچ امیدوار انتخابی میدان میں باقی رہ گئے ہیں جن میں سے ایک سابق وزیر خارجہ ہلاری کلنٹن دیگر امیدواروں پر سبقت حاصل کئے ہوئے ہیں ۔ دیگر تین بڑے امیدوار فلوریڈا کے رکن سینٹ مارکو یوگیو ‘ ٹیکساس کے رکن سینٹ ٹیڈ روس ‘ ری پبلکن پارٹی میں اور دو میعادوں سے رکن سینٹ منتخب ہونے والے ویرمونٹ کے نمائندے بارنی سینڈرس اور ہلاری کلنٹن ڈیموکریٹک پارٹی امیدوار ہیں ۔

ٹرمپ کی کامیابی سے ری پبلکن پارٹی کو صدمہ پہنچ سکتا ہے کیونکہ جنوبی کیرولینا 1980سے اب تک سوائے 2012ء کے ڈیموکریٹک پارٹی کے صدارتی امیدواروں کی تائید کرتی آرہی ہے ۔ٹرمپ نے جشن فتح کی اپنی تقریر میں کہا کہ وہ جنوبی کیرولینا کے عوام سے اظہار تشکر کرتے ہوئے اپنی تقریر کا آغاز کرناچاہتے ہیں ۔اس ریاست کے عوام نے انہیں ایک نئی بلندی پر پہنچا دیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ صدراتی انتخاب میں حصہ لینا کوئی آسان بات نہیں ہے ‘ یہ انتہائی سخت مقابلہ ہے ۔ یہ انتہائی زہریلا اور ضرر رساں بھی ہے لیکن جب آپ کامیاب ہوجائیں تو یہی انتہائی حسین معلوم ہونے لگتا ہے ۔ ان کی بیوی میلانیا نے بھی تقریر کی ۔ انہوں نے کہا کہ وہ اپنے شوہر کو مبارکباد دینا چاہتی ہے ۔ وہ انتہائی سخت محنت کررہے ہیں ۔ دوسرے مقام کیلئے اپنی شدت کی جدوجہد کے دوران جب کہ ٹرمپ نے 32.5 فیصد ‘ روبیو نے 22.5فیصد اور ٹیڈ کروز نے 22.3فیصد ووٹ حاصل کئے ۔ دریں اثناء نیوڈا میں ڈیموکریٹک پارٹی کی امیدوار ہلاری کلنٹن اور ان کے حامیوں نے اطمینان کی سانس لی جب کہ انہوں نے بہت کم ووٹوں سے اپنے حریف سینڈرس پر کامیابی حاصل کی ۔ کلنٹن نے سینڈرس سے پانچ فیصد زیادہ ووٹ حاصل کرتے ہوئے انہیں شکست دے دی ۔ ہلاری کلنٹن نے بعدازاں ان کے حامیوں کے ایک ہجوم سے لاس ویگاس میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ بہت زیادہ پُرجوش ہیں اور اپنے تمام حامیوں کی شکرگذار ہیں ‘ ممکن ہے کہ بعض لوگوں کو اس بارے میں شک ہو لیکن انہیں یقین ہے کہ وہی مقابلہ میں کامیاب رہیں گی ۔کلنٹن کی نیوڈا میں کامیابی صرف 10دن قبل سینڈرس کے مقابلہ میں نیو امپشائر میں ان کی ناکامی کے بعد ان کی حوصلہ افزائی کرنے کیلئے کافی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT