Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / جنوری میں جی ایچ ایم سی کے انتخابات

جنوری میں جی ایچ ایم سی کے انتخابات

جاریہ ماہ انتخابی اعلامیہ کی اجرائی ، وزیر آئی ٹی کے ٹی راما راؤ
حیدرآباد۔/11ڈسمبر، ( سیاست نیوز) وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے کہا کہ جنوری کے تیسرے ہفتہ میں گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات منعقد ہوں گے۔ انہوں نے بتایا کہ جاریہ ماہ کے اواخر میں انتخابات کیلئے اعلامیہ جاری کردیا جائے گا اور توقع ہے کہ جنوری کے تیسرے ہفتہ میں رائے دہی رہے گی۔ انہوں نے بتایا کہ گریٹر انتخابات کیلئے ٹی آر ایس پارٹی باضابطہ علحدہ انتخابی منشور جاری کرے گی جس میں شہر کی ترقی سے متعلق حکومت کے وعدے اور اعلانات شامل رہیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ گریٹر انتخابات میں رائے دہی کے فیصد میں اضافہ کیلئے مختلف فلمی ستاروں اور دیگر اہم شخصیتوں کے ذریعہ شعور بیداری پروگرام منعقد کئے جائیں گے۔ کے ٹی آر نے گریٹر انتخابات میں ٹی آر ایس کی شاندار کامیابی کی پیش قیاسی کی اور کہا کہ حکومت نے گزشتہ 18ماہ میں شہر کی ترقی کیلئے جو اقدامات کئے اس کا اثر انتخابات پر دیکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل کے ضمنی انتخابات میں عوام نے ٹی آر ایس کو جس بھاری اکثریت سے کامیابی دلائی ہے اسی طرح گریٹر میں بھی پارٹی کی کامیابی کا تسلسل جاری رہے گا۔ انہوں نے کسی بھی جماعت کے ساتھ انتخابی مفاہمت کے امکانات کو مسترد کردیا اور کہا کہ پارٹی تنہا مقابلہ کرے گی اور 80سے زائد نشستوں پر کامیابی حاصل ہوگی۔ اس طرح گریٹر پر ٹی آر ایس کا قبضہ رہے گا۔ انہوں نے شہر کی ترقی کے سلسلہ میں کئے گئے مختلف اقدامات کا حوالہ دیا اور کہا کہ پانی اور برقی کی صورتحال بہتر بنانا حکومت کا اہم کارنامہ ہے۔ حکومت نے کرشنا اور گوداوری سے شہر کو پانی کی سربراہی کیلئے نئی پائپ لائن کا کام مکمل کرلیا ہے۔ اس کے علاوہ موسم گرما میں برقی قلت کے باوجود شہر میں برقی کٹوتی نہیں کی گئی اور 24گھنٹے برقی سربراہ کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ سابق میں موسم گرما میں شہر میں بھی کم از کم 4گھنٹے برقی کٹوتی کی جاتی رہی ہے لیکن ٹی آر ایس حکومت نے حیدرآباد کو برقی کٹوتی سے نجات دلادی۔ انہوں نے میٹرو ریل اور دیگر پراجکٹس کی عاجلانہ تکمیل کا تیقن دیا۔ کے ٹی آر نے کہا کہ غریبوں کیلئے ڈبل بیڈروم کے مکانات کی اسکیم پر تمام اسمبلی حلقہ جات میں عمل کیا جارہا ہے اور گریٹر کے تحت آنے والے تمام اسمبلی حلقوں میں اس اسکیم کا سنگ بنیاد رکھا گیا ہے۔ واضح رہے کہ ٹی آر ایس کی انتخابی مہم کی ذمہ داری کے ٹی آر کو سونپی ہے جو روزانہ شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے ترقیاتی پروگراموں میں حصہ لے رہے ہیں۔ وہ پارٹی کارکنوں کے اجلاس منعقد کرتے ہوئے انتخابی حکمت عملی کی تیاری میں مصروف ہیں۔ اپوزیشن جماعتوں کے قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت میں کے ٹی آر کا اہم رول ہے۔

TOPPOPULARRECENT