Wednesday , August 23 2017
Home / دنیا / جنگ کا خوف،11 ہزار افغانی ایران سے فرار

جنگ کا خوف،11 ہزار افغانی ایران سے فرار

تہران 4 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ایران میں پناہ گزین افغان باشندوں کو شام اور دوسرے ملکوں کی جنگ میں بھرتی کئے جانے کی پالیسی کے بعد بڑی تعداد میں پناہ گزین ایران سے نکلنا شروع ہو گئے ہیں۔ایک رپورٹ کے مطابق جنگ میں جھونکے جانے کے خوف سے گیارہ ہزار افغان پناہ گزین ایران سے نکل چکے ہیں۔سویڈن کے ایک ریڈیو نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ ایران میں مقیم افغان پناہ گزینوں میں 11 ہزار نے ملک چھوڑ دیا ہے۔ ان میں سے بیشتر کی عمریں 18 سال سے کم ہیں۔ انہیں خدشہ تھا کہ ایرانی حکومت انہیں دوسرے ملکوں میں جنگ کے ایندھن کے طور پر استعمال کرنے کا ارادہ رکھتی ہے ۔ سویڈش ریڈیو کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران سے فرار کے بعد کم عمر افغان جنگجو واپس اپنے ملک میں نہیں بلکہ سویڈن سمیت یورپ کے دوسرے ملکوں میں پناہ لے رہے ہیں۔ سویڈن میں پہنچنے والے افغان پناہ گزین براہ راست افغانستان سے نہیں بلکہ ایران سے فرار کے بعد یہاں پہنچے ہیں۔ سویڈن پہنچنے والیافغان پناہ گزینوں کا کہنا ہے کہ وہ اس لیے فرار ہوئے کیوں کہ ایرانی حکومت انہیں شام میں جنگ کے لیے بھرتی کرنا چاہتی تھی۔ریڈیو رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جاریہ سال کے دوران یورپ پہنچنے والے افغان پناہ گزینوں کی تعداد 11 ہزار سے زائد ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران میں موجود افغان پناہ گزین کیمپوں میں غربت اور بے روزگاری سے ایران فائدہ اٹھاتے ہوئے افغان شہریوں کو تنخواہوں اور دیگر مراعات کے عوض شام میں سرگرم شیعہ ملیشیا کے لیے بھرتی کر رہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT