Saturday , April 29 2017
Home / اضلاع کی خبریں / جن دھن کھاتوں پر محکمہ انکم ٹیکس کی نگاہ

جن دھن کھاتوں پر محکمہ انکم ٹیکس کی نگاہ

کریم نگر میں زیرو بیالنس کے 2 لاکھ میں سے صرف 5 ہزار کھاتے دار

کریم نگر ۔ 26 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : مرکزی حکومت نے پرائم منسٹر جن دھن یوجنا کا آغاز کیا تھا جس کے تحت ہر خاندان کو بینک میں کھاتہ کھولنا چاہئے ۔ ضلع کریم نگر قدیم میں 14 لاکھ 59 ہزار 801 خاندانوں نے بنک میں اکاونٹ کھولنے کی اجازت دی تھی جن میں صرف 10 لاکھ 32 ہزار 30 افراد نے کھاتے کھولے ۔ تعجب کی بات یہ ہے کہ 8 نومبر تک دو لاکھ 20 ہزار کھاتوں میں ایک روپیہ بھی نہیں تھا لیکن جوں ہی ہزار اور پانچ سو کے نوٹوں کو رد کردیا گیا تو تقریبا ہر کھاتہ میں نقد رقم جمع ہوتی چلی گئی ۔ اس اسکیم میں صرف 50 ہزار روپئے اپنے کھاتے میں رکھنے کی اجازت دی گئی تھی لیکن کھاتہ داروں نے پچاس ہزار سے بھی زائد رقم اپنے کھاتوں میں جمع کی اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ رشتہ دار اور دوست احباب نے ان کے کھاتوں میں رقم جمع کروائی کیوں کہ بڑے نوٹوں کی تنسیخ عمل میں آئی تھی ان کھاتہ داروں کو اس بات کا پتہ نہیں کہ کسی بھی کھاتہ میں 50 ہزار روپئے سے زائد رقم ہو تو پرائم منسٹر جن دھن یوجنا اسکیم سے وہ کھاتہ خارج ہوجاتا ہے اور عام کھاتے میں اس کا شمار ہوتا ہے جس سے حکومت کی جانب سے فراہم کی جانے والی سہولتیں جیسے سفید راشن کارڈ ، وظیفہ وغیرہ سے یہ کھاتہ دار محروم ہوجاتا ہے اگر ڈھائی لاکھ سے زائد رقم جمع کرنے پر انکم ٹیکس بھی ادا کرنا پڑے گا ۔ ایسا لگتا ہے کہ بڑے نوٹوں کی منسوخی پر سیاسی قائدین اور کالا دھن رکھنے والے افراد نے پرائم منسٹر جن دھن یوجنا کے کھاتہ دار کو پچاس ہزار روپئے ، اور ایک لاکھ روپئے پر کمیشن مقرر کر کے ان کے کھاتوں میں جمع کی ہوگی جس سے جن دھن یوجنا اسکیم سے ایک لاکھ کھاتے داروں کے کھاتے منجمد ہوگئے ہیں اور کھاتے داروں کو طلب کر کے رقم کے تعلق سے تحقیقات کی جارہی ہیں یہ سب پانچ سو اور ہزار کے نوٹوں کی تنسیخ کی دین ہے ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT