Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / جوبلی ہلز میں مقتول کے جلوس جنازہ کے دوران تشدد

جوبلی ہلز میں مقتول کے جلوس جنازہ کے دوران تشدد

حملہ آوروں کے مکانات پر سنگباری ۔ بعض گاڑیوں کو بھی نقصان
حیدرآباد 8 مئی (سیاست نیوز) جوبلی ہلز سری رام نگر کالونی میں مقتول عامر خان کے جلوس جنازہ میں تشدد کے واقعات پیش آئے جس کے بعد حالات کشیدہ ہوگئے۔ پولیس نے حالات پر قابو پانے ریاپڈ ایکشن فورس کو متعین کرکے امتناعی احکام بھی نافذ کردیئے۔ دو دن قبل 22 سالہ محمد عامر عرف عامر خان کا سنجے نگر علاقہ میں نامعلوم افراد نے قتل کردیا تھا ۔ پولیس نے پوسٹ مارٹم کے بعد نعش کو ورثا کے حوالے کردیا تھا۔ کل رات مقتول کے جلوس جنازہ میں موجود بعض نوجوانوں نے حملہ آوروں کے مکانات پر سنگباری کردی۔ جلوس جنازہ میں موجود پولیس بھی بے بس ہوگئی۔ نوجوانوں نے مبینہ طور پر پولیس پٹرولنگ پارٹی بلو کولٹس کو نذر آتش کردیا ۔ دیگر پولیس گاڑیوں پر سنگباری کی گئی ۔ حالات اچانک کشیدہ ہونے سے پولیس نے ریاپڈ ایکشن فورس اور دیگر نیم فوجی دستوں کو متعین کردیا۔ کشیدگی کے دوران اے سی پی پنجہ گٹہ ایم وینکٹیشورلو اور ڈٹکٹیو انسپکٹر جوبلی ہلز متو یادو بھی زخمی ہوگئے۔ خانگی گاڑیوں کو بھی نشانہ بنایا گیا اور نقصان پہنچایا گیا۔ بعض دوکانات کو بھی نقصان پہنچایا گیا۔ جلوس جنازہ کے دوران اچانک سنگباری اور کشیدگی کی اطلاع ملنے پر کمشنر پولیس ایم مہندر ریڈی مقام واقعہ پر پہونچ گئے اور معائنہ کیا۔ تفصیلات بتاتے ہوئے کمشنر پولیس نے بتایا کہ علاقہ میں موجود سی سی ٹی وی کیمروں کی ریکارڈنگ کی مدد سے 25 افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے اور مزید 50 افراد کی نشاندہی کی گئی جن کے خلاف کارروائی کی جائیگی۔ اُنھوں نے بتایا کہ عامر خان قتل کیس میں ملوث 4 افراد کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے اور تحقیقات جاری ہیں ۔ اُنھوں نے بتایا کہ دفعہ 144 امتناعی احکام نافذ کئے گئے ہیں اور متاثرہ علاقوں میں پولیس پیکٹ متعین کئے جاچکے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT