Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / جگن کی بھوک ہڑتال چھٹے دن میں داخل

جگن کی بھوک ہڑتال چھٹے دن میں داخل

صحت پر ڈاکٹرس کا اظہار تشویش ۔ تلگودیشم کی تنقیدیں بھی جاری
گنٹور 12 اکٹوبر ( پی ٹی آئی ) آندھرا پردیش کیلئے خصوصی زمرہ کا مطالبہ کرتے ہوئے وائی ایس آر کانگریس کے صدر جگن موہن ریڈی کی جانب سے شروع کی گئی غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال آج چھٹے دن میںداخل ہوگئی ۔ ڈاکٹرس نے آج ان کی صحت کے تعلق سے تشویش کا اظہار کیا ہے ۔ جگن کی صحت پر نظر رکھنے والے سرکاری ڈاکٹرس کے بموجب اگر جگن اپنی بھوک ہڑتال جاری رکھیں تو انہیں گردہ کا عارضہ لاحق ہوسکتا ہے اور صحت کے دوسرے مسائل بھی پیدا ہوسکتے ہیں۔ اس دوران وائی ایس آر کانگریس اور برسر اقتدار تلگودیشم کے قائدین کے مابین قائد اپوزیشن کی بھوک ہڑتال کے تعلق سے لفظی جنگ کا سلسلہ چل رہا ہے ۔ ریاستی وزرا پی پلا راؤ اور کے سرینواس نے جگن کی بھوک ہڑتال پر شکوک کا اظہار کیا تھا اور جگن کی گلوکوز کی سطح میں اضافہ پر سوال کیا تھا ۔ وائی ایس آر کانگریس لیڈر امباٹی رام بابو نے آج کہا کہ ایک ایسے وقت جبکہ بھوک ہڑتال چھٹے دن میں داخل ہوگئی ہے اور جگن کی صحت پر تشویش پیدا ہو رہی ہے جس طرح سے وزرا بے شرمی سے بات کر رہے ہیں ان میں انسانیت کا فقدان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان وزرا کا الزام ہے کہ جگن کی بھوک ہڑتال فرضی ہے ۔ وائی ایس آر کانگریس قائدین کے تبصرہ کا جواب دیتے ہوئے ریاستی وزیر اطلاعات پی رگھوناتھ ریڈی نے آج کہا کہ جگن کو اب بھوک ہڑتال کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جب وائی ایس راج شیکھر ریڈی نے پانچ لاکھ ایکڑ اراضی خصوصی معاشی زون کیلئے دیدی اس وقت جگن کہاں تھے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT