Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / جھارکھنڈ کے وزیر کے خلاف کرپشن کے الزامات معاملہ کا جائزہ لینے چیف منسٹر رگھوبر داس کا تیقن

جھارکھنڈ کے وزیر کے خلاف کرپشن کے الزامات معاملہ کا جائزہ لینے چیف منسٹر رگھوبر داس کا تیقن

رانچی ۔ 25 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : چیف منسٹر جھارکھنڈ رگھوبر داس نے آج ریاستی اسمبلی میں تیقن دیا ہے کہ ہاوزنگ بورڈ کے تحت مختص اراضیات کے تنازعہ کا جائزہ لیں گے جب کہ جھارکھنڈ مکتی مورچہ آج دوسرے دن بھی وزیر شہری ترقیات سی پی سنگھ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاج کیا ۔ اپوزیشن لیڈر ہیمنت سورین کی جانب سے ریاستی وزیر کے خلاف کارروائی کے مطالبہ پر چیف منسٹر نے بتایا کہ بہت جلد ہاوزنگ بورڈ کا اجلاس طلب کر کے تنازعہ کی یکسوئی کریں گے ۔ انہوں نے بغیر ثبوت کے الزامات اور جوابی الزامات سے باز آجانے کی تمام ارکان سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کرپشن کے مسئلہ پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی ۔ تاہم ہیمنت سورین نے کہا کہ ایوان میں ریاستی وزیر سی پی سنگھ کے بیان کو قبول نہیں کیا جائے گا کیوں کہ ہاوزنگ بورڈ کی جانب سے اراضیات کے الاٹمنٹ کے تنازعہ میں ریاستی وزیر خود ملوث ہیں ۔ ریاستی وزیر اور اپوزیشن لیڈر کے درمیان ایکدوسرے کے خلاف کرپشن کے الزامات سے ایوان اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کے مناظر دیکھے گئے تھے جب کہ سی پی سنگھ نے الزام عائد کیا کہ سورین نے نہ صرف قبائیلوں کی اراضی خریدی ہے بلکہ ان کی نسبتی ہمشیرہ اور جے ایم ایم رکن اسمبلی سیتا سورین نے راجیہ سبھا انتخابات میں ایک امیدوار سے بھاری رقم حاصل کی ہے ۔ ریاستی وزیر یہ الزامات اس وقت عائد کئے جب جے ایم ایم کے پرچہ نامزدگی کے ادخال کے وقت الیکشن کمیشن کو گمراہ کرنے اور ہرمو ہاوزنگ بورڈ الاٹمنٹ میں بے قاعدگیوں کے ارتکاب پر ان سے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ۔ تاہم سی پی سنگھ نے دونوں الزامات کی تردید کی اور بتایا کہ انہوں نے 3000 مربع گز قطعہ اراضی بالکلیہ شفاف انداز میں ایک شخص سے خریدا ہے اور جائیداد کی تمام دستاویزات الیکشن کمیشن میں داخل کردی گئی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT