Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / جیٹلی کو ڈی ڈی سی اے تنازعہ میں بچانے کی کوششیں

جیٹلی کو ڈی ڈی سی اے تنازعہ میں بچانے کی کوششیں

بدعنوانیوں میں ملوث مرکزی وزیر کی مخالفین کو دھمکیاں ‘ کانگریس قائدین کا دعویٰ

حیدرآباد ۔21ڈسمبر ( سیاست نیوز)  تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن کی بدعنوانیوں کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا اور بی جے پی ارکان پارلیمنٹ کی جانب سے ثبوت پیش کرنے پر بھی خاموشی کو معنی خیز قرار دیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کانگریس کے ترجمان ملو روی اور کے مہیش نے کہا کہ ڈی ڈی سی اے میں مرکزی وزیر فینانس مسٹر ارون جیٹلی نے بحیثیت صدر بڑے پیمانے پر بدعنوانیاں کی ہیں ۔ کانگریس کی جانب سے اگر اس کو مسئلہ بنایا جارہا ہے تو بی جے پی کے ارکان پارلیمنٹ بالخصوص کیرتی آزاد ثبوت پیش کررہے ہیں ‘ اس کے باوجود مرکزی حکومت بدعنوانیوں میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کرنے کے بجائے  تماشہ دیکھ رہی ہے ‘ جس طرح ماضی میں بدعنوانیوں میں ملوث ہونے والے دو چیف منسٹرس اور مرکزی وزراء کو بچایا گیا ہے ۔ اس طرح مرکزی وزیر فینانس مسٹر جیٹلی کو بچانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جیٹلی اپنی غلطی کا اعتراف کرتے ہوئے وزارت سے مستعفی ہونے کے بجائے بدعنوانیوں کی مذمت کرنے والوں کو ڈرا دھمکا رہے ہیں ۔ اس مسئلہ پر اسمبلی کا خصوصی اجلاس طلب کرنے والے چیف منسٹر دہلی کے علاوہ دوسروں کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ درج کرا رہے ہیں ۔ بدعنوانیوں  کے الزام میں ملوث ہونے اور پختہ ثبوت  ہونے کے باوجود نریندر مودی کی زیر قیادت این ڈی اے حکومت ان کا مکمل تحفظ کررہی ہے ۔ سیاسی انتقام لینے کیلئے صدر کانگریس مسز سونیا گاندھی اور نائب صدر راہول گاندھی کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کرتے ہوئے ان سے سیاسی انتقام لیا جارہا ہے ۔ ماضی میں چیف منسٹرس مدھیہ پردیش اور راجستھان کے علاوہ مرکزی وزراء  بے قاعدگیوں میں ملوث رہنے پر ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی ‘ تاہم چیف منسٹر دہلی کے آفس پر سی بی آئی کے عہدیداروں نے دھاوا کرتے ہوئے ان کے خلاف مقدمات ہونے کا دعویٰ کیا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT