Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / جیٹلی کیس میں جھوٹا حلف نامہ دینے پر کجریوال کو مشکلات

جیٹلی کیس میں جھوٹا حلف نامہ دینے پر کجریوال کو مشکلات

نئی دہلی، 23 اگست (سیاست ڈاٹ کام) وزیر خزانہ ارون جیٹلی کے دہلی ضلع کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے ) کے مجرمانہ ہتک عزت معاملے میں وزیر اعلی اروند کجریوال کی مشکلیں بڑھ سکتی ہیں۔ اس معاملے میں جیٹلی کی طرف سے کجریوال پر مبینہ طور پر جھوٹا حلف نامہ داخل کرنے کا الزام لگاتے ہوئے عرضی دائر کرکے کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ کجریوال نے دہلی ہائی کورٹ میں ایک حلف نامہ داخل کیا تھا اور جیٹلی کی طرف سے اس حلف نامے کو جھوٹا کہا گیا ہے ۔ اس معاملے میں جیٹلی کی طرف سے دائر نئی عرضی پر عدالت نے کجریوال کونوٹس جاری کرکے چار ہفتے میں جواب طلب کیا ہے۔ وزیر اعلی نے جیٹلی پر ڈی ڈی سی اے کا صدر رہتے ہوئے مبینہ طور پر مالی بے ضابطگیوں کے الزام لگائے تھے ۔ جیٹلی نے وزیر اعلی کے خلاف دس کروڑ روپے کا مجرمانہ معاملہ درج کیا تھا۔ اس معاملے میں کجریوال کے وکیل رہے رام جیٹھ ملانی نے سترہ مئی کو سماعت کے دوران جیٹلی کے خلاف توہین آمیز الفاظ کہے تھے ۔ اس کے خلاف دس کروڑ روپے کا ایک اور مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔ جیٹھ ملانی نے کہا تھاکہ توہین آمیز الفاظ کہنے کے لئے انہیں وزیر اعلی نے کہا تھا۔ کجریوال نے جیٹھ ملانی کے اس بیان کے بعد حلف نامہ دیا تھا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ہتک عزت کے معاملے میں انہیں جیٹھ ملانی کو توہین آمیز الفاظ کا استعمال کرنے کے لئے نہیں کہا تھا۔ جیٹلی کی طرف سے سینئر وکیل راجیو نائک اور سندیپ سیٹھی نے دائر نئی عرضی میں کہا کہ یہ حلف نامہ مبینہ طور پر جھوٹا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT