Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / جیہ للیتا کی چھٹویں مرتبہ حلف برداری

جیہ للیتا کی چھٹویں مرتبہ حلف برداری

CHENNAI, MAY 23 (UNI):-Tamil Nadu Governor K Rosaiah greeting J Jayalalithaa after she sworn in as Chief Minister of Tamil Nadu, in Chennai on Monday. UNI PHOTO-108u

کابینہ میں 32 وزراء شامل، انتخابی وعدوں سے متعلق احکامات جاری
چینائی ۔ 23 ۔ مئی : ( سیاست ڈاٹ کام): آل انڈیا انا ڈی ایم کے سربراہ جیہ للیتا جنہوں نے مسلسل دوسری میعاد کے لیے اقتدار پر قبضہ کر کے 32 سالہ تاریخ کو ایک نئی جہت عطا کی ہے آج چھٹویں مرتبہ چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف لیا اور قدیم روایت کو توڑتے ہوئے تقریب حلف برداری میں اپوزیشن ڈی ایم کے کو بھی مدعو کیا گیا ۔ گورنر کے روشیا نے 68 سالہ جیہ للیتا اور دیگر 28 وزراء بشمول ان کے با اعتماد رفیق اوپترو سیلوم کو تامل زبان میں بھگوان کے نام پر عہدہ اور راز داری کا حلف دلوایا ۔ کابینہ میں 15 سابقہ اور 13 نئے چہرے بشمول 3 خواتین کو شامل کیا گیا ۔ تقریب گاہ میں بالکل سامنے کی نشستوں پر مرکزی وزراء وینکیا نائیڈو ، پی رادھا کرشنن ، ڈپٹی اسپیکر لوک سبھا اور سینئیر ڈی ایم کے لیڈر ایم تھبمی دورائی اور جیہ للیتا کی ہمراز ششی کلا جلوہ افروز تھے ۔ اپوزیشن سے ڈی ایم کے خازن ایم کے اسٹالن ، سابق ڈی ایم کے وزراء ای وی یلو ، پونمڈی ، پارٹی ارکان اسمبلی شیکھر بابو ، واگھی چندرا شیکھر اور کوکاسیلوم شریک تھے ۔ جب کہ کئی عشروں سے یہ روایت ہی ہے کہ انا ڈی ایم کے اور ڈی ایم کے سیاسی مخاصمت کی بناء ایکدوسرے کی تقاریب حلف برداری سے دور رکھا ۔ مدراس یونیورسٹی کے آڈیٹوریم میں منعقدہ تقریب حلف برداری صرف 30 منٹ میں ختم ہوگئی ۔ جیہ للیتا کی قیام گاہ پیوس گارڈن سے تقریب گاہ تک راستوں کو سجایا گیا تھا اور جگہ جگہ انا ڈی ایم کے کارکنان ، ڈھول تاشے پیٹتے ہوئے رقص کرتے دیکھے گئے۔ بعدازاں رات میں چیف منسٹر نے مزید چار وزراء کو شامل کیا ہے جو چہارشنبہ کو حلف لیں گے۔ اس طرح کابینی وزراء کی تعداد 32 ہوجائے گی۔ حلف برداری کے فوری بعد جیہ للیتا نے انتخابی وعدوں کو پورا کرتے ہوئے کسانوں کی فصلوں پر قرض برخاست کرنے، 100 یونٹس مفت برقی سربراہی اور شراب کی دکانات بند کرنے سے متعلق احکامات جاری کئے ۔ ٹاملناڈو میں جیہ للیتا نے متواتر دوسری مرتبہ اقتدار حاصل کرتے ہوئے گذشتہ 32 سال سے جاری رجحان کو ختم کیا ہے جہاں عوام ایک کے بعد دوسری پارٹی کو اقتدار حوالے کیا کرتے تھے۔

TOPPOPULARRECENT