Monday , July 24 2017
Home / Top Stories / جی ایس ٹی بل پر پارلیمنٹ میں نمایاں پیشرفت کی توقع

جی ایس ٹی بل پر پارلیمنٹ میں نمایاں پیشرفت کی توقع

NEW DELHI, MAR 9 (UNI):- Prime Minister Narendra Modi interacting with media ahead of the second phase of Budget Session of the Parliament, in New Delhi on Thursday. UNI PHOTO-9U

اہم مسائل پر صحتمندانہ مباحث پر وزیراعظم نریندر مودی کا زور، راجیہ سبھا میں حاجی عبدالسلام اور سابقہ ارکان کو خراج عقیدت

نئی دہلی ۔ 9 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) پارلیمنٹ کے بجٹ سیشن کا دوسرا مرحلہ آج شروع ہوگیا اور وزیراعظم نریندر مودی نے توقع ظاہر کی کہ گڈس اینڈ سرویسیس ٹیکس (جی ایس ٹی) بل پر نمایاں پیشرفت ہوگی۔ اس کے علاوہ دیگر مسائل پر بھی جمہوری انداز میں مباحث ہوں گے۔ انہوں نے پارلیمنٹ کے باہر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہمیں توقع ہیکہ جی ایس ٹی پر نمایاں پیشرفت ہوگی کیونکہ تمام ریاستوں نے اس معاملہ میں مثبت تعاون کیا ہے۔ تمام سیاسی جماعتوں کا جی ایس ٹی کے تعلق سے ردعمل مثبت رہا۔ تقریباً ایک ماہ کے وقفہ  کے بعد بجٹ سیشن کا دوسرا مرحلہ آج شروع ہوا ہے۔ نریندر مودی نے کہا کہ ہم وقفہ کے بعد دوبارہ یہاں آئے ہیں اور توقع ہیکہ بجٹ تجاویز پر تفصیلی مباحث ہوں گے۔ انہوں نے ایوان میں صحتمندانہ مباحث کی توقع ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ غریب عوام کو درپیش مسائل پر توجہ دی جائے۔ نریندر مودی نے کہا کہ ہم تمام جماعتوں کی رضامندی کے ساتھ جمہوری انداز میں آگے بڑھیں گے۔ توقع ہیکہ جی ایس ٹی کا مرحلہ بھی بجٹ سیشن کے آئندہ ماہ اختتام سے قبل مکمل ہوجائے گا۔ جی ایس ٹی کو ملک میں اب تک کا سب سے بڑا ٹیکس اصلاحات کا عمل سمجھا جارہا ہے

جس کے نتیجہ میں توقع کی جارہی ہیکہ جی ڈی پی شرح ترقی میں کم از کم ایک فیصد اضافہ ہوگا۔ مرکز نے سنٹرل جی ایس ٹی بل پارلیمنٹ میں متعارف کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ اس کی توثیق کے بعد ریاستیں اسٹیٹ جی ایس ٹی بل اپنی متعلقہ اسمبلیوں میں پیش کریں گی۔ سنٹرل اور اسٹیٹ کے عہدیدار یہ فیصلہ کریں گے کہ کن اشیاء اور خدمات کو ٹیکس کے زمرہ میں شامل کیا جائے اور پھر اسے منظوری کیلئے کونسل سے رجوع کیا جائے گا۔ حکومت یکم؍ جولائی سے اسے نافذ کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ اس دوران راجیہ سبھا کی آج کارروائی نہ چل سکی اور رکن حاجی عبدالسلام کو خراج عقیدت پیش کرنے کے بعد کارروائی دن بھر کیلئے ملتوی کردی گئی۔ آج بجٹ سیشن کا دوسرا مرحلہ جیسے ہی شروع ہوا صدرنشین حامدانصاری نے حاجی عبدالسلام رکن راجیہ سبھا کے 28 فبروری کو بعمر 69 سال انتقال کا تذکرہ کیا۔ وہ اپریل 2014ء سے منی پور کی نمائندگی کررہے تھے۔ حامد انصاری نے تعزیتی قرارداد میں کہاکہ ملک ایک ممتاز پارلیمنٹیرین اور غیرمعمولی صلاحیتوں کے حامل ایڈمنسٹریٹر سے محروم ہوگیا۔ انہوں نے سابقہ ارکان پی رادھا کرشنا، پی شیوشنکر، سید شہاب الدین اور سابق لوک سبھا اسپیکر ربی رے کے بھی انتقال کا تذکرہ کرتے ہوئے انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT