Friday , September 22 2017
Home / ہندوستان / جی ایس ٹی ملک کیلئے برہمپتر، اسوکیم کا ادعا

جی ایس ٹی ملک کیلئے برہمپتر، اسوکیم کا ادعا

چینائی ۔ 12 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) اشیاء اور خدمات ٹیکس مسودہ قانون ملک کیلئے ’’برہمپتر‘‘ ہے۔ یہ ادعا کرتے ہوئے صنعتی تنظیم اسوکیم نے آج کہا کہ ملک کو سادہ پلیٹ فارم کی ضرورت ہے تاکہ ریاستوں میں اشیائے ضروریہ کی نقل و حرکت بلارکاوٹ ہوسکے۔ صدر اسوکیم سنیل کنوریا نے کہا کہ اشیاء کی موجودہ اندرون ملک نقل و حرکت کئی مرحلوں سے گذرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اندرون ملک تجارت بیرون ملک تجارت سے زیادہ مشکل ہے۔ ہمیں یقین ہیکہ جی ایس ٹی ممکن ہے اور توقع ہیکہ پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس میں اسے منظوری ملک جائے گی۔ ہم حکومت ٹاملناڈو سے بھی اپیل کریں گے کہ جی ایس ٹی کی تائید کرے۔ ایس جی پربھاکرن کی زیرصدارت مدراس چیمبر آف کامرس نہ صرف ریاست کا پیداواری ادارہ ہے بلکہ ایک صارف بھی ہے۔ اگر دیگر ریاستوں کے اداروں سے اس کا تقابل کیا جائے تو یہ دگنی ذمہ داری رکھتا ہے۔ اگر جی ایس ٹی بل کے کئی اثرات ملک کی ریاستوں پر مرتب ہوں تو ہماری کوشش ہوگی کہ حکومت ٹاملناڈو جی ایس ٹی کی تائید کرے۔ نئی حکومت کیلئے اسوکیم نے وزارت صنعت و تجارت کے تعاون سے ایک نیا لائحہ عمل تیار کیا ہے۔ ٹاملناڈو اگر اس پر عمل کرے تو روزگار کے نئے 90 لاکھ مواقع پیدا ہوسکتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT